القرآن الحکیم (اردو ترجمہ)

حضرت شاہ عبدالقادر

سورۃ النمل

Previous           Index           Next

بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيمِ

 

طس ۚ

 طا۔ سین۔

تِلْكَ آيَاتُ الْقُرْآنِ وَكِتَابٍ مُبِينٍ 

یہ آیتیں ہیں قرآن اور کھلی (واضح) کتاب کی۔

.1

هُدًى وَبُشْرَى لِلْمُؤْمِنِينَ

سوجھ(ہدایت) اور خوشخبری ایمان والوں کو۔

.2

الَّذِينَ يُقِيمُونَ الصَّلَاةَ وَيُؤْتُونَ الزَّكَاةَ وَهُمْ بِالْآخِرَةِ هُمْ يُوقِنُونَ

جو کھڑی رکھتے (قائم کرتے) ہیں نماز اور دیتے ہیں زکوٰۃ، اور وہ پچھلا گھر (آخرت) یقین جانتے ہیں۔

.3

إِنَّ الَّذِينَ لَا يُؤْمِنُونَ بِالْآخِرَةِ زَيَّنَّا لَهُمْ أَعْمَالَهُمْ فَهُمْ يَعْمَهُونَ

جو لوگ نہیں مانتے آخرت کو، اُن کو بھلے دکھائے ہیں ہم نے اُن کے کام، سو وہ بہکے۔

.4

أُولَئِكَ الَّذِينَ لَهُمْ سُوءُ الْعَذَابِ وَهُمْ فِي الْآخِرَةِ هُمُ الْأَخْسَرُونَ

 وہی ہیں جنکو بُری طرح کی مار ہے، اور آخرت میں وہی ہیں خراب۔

.5

وَإِنَّكَ لَتُلَقَّى الْقُرْآنَ مِنْ لَدُنْ حَكِيمٍ عَلِيمٍ

 اور تجھ کو تو قرآن ملتا ہے ایک حکمت والے خبردار سے۔

.6

إِذْ قَالَ مُوسَى لِأَهْلِهِ إِنِّي آنَسْتُ نَارًا

 جب کہا موسیٰ نے اپنے گھر والوں کو، میں نے دیکھی ہے ایک آگ،

 سَآتِيكُمْ مِنْهَا بِخَبَرٍ أَوْ آتِيكُمْ بِشِهَابٍ قَبَسٍ لَعَلَّكُمْ تَصْطَلُونَ

اب لاتا ہوں تمہارے پاس وہاں سے کچھ خبر،یا لاتا ہوں انگارا سُلگا کر، شاید تم تاپو۔

.7

فَلَمَّا جَاءَهَا نُودِيَ أَنْ بُورِكَ مَنْ فِي النَّارِ وَمَنْ حَوْلَهَا

پھر جب پہنچا اس پاس، آواز ہوئی، کہ برکت رکھتا ہے جو کوئی آگ میں ہے اور جو کوئی اسکے آس پاس ہے،

وَسُبْحَانَ اللَّهِ رَبِّ الْعَالَمِينَ

اور پاک ہے ذات اﷲ کی جو صاحب سارے جہان کا۔

.8

يَا مُوسَى إِنَّهُ أَنَا اللَّهُ الْعَزِيزُ الْحَكِيمُ

 اے موسیٰ! وہ میں اﷲ ہوں زبردست حکمتوں والا۔

.9

وَأَلْقِ عَصَاكَ ۚ

 اور ڈال دے لاٹھی اپنی۔

فَلَمَّا رَآهَا تَهْتَزُّ كَأَنَّهَا جَانٌّ وَلَّى مُدْبِرًا وَلَمْ يُعَقِّبْ ۚ

پھر جب دیکھا اس کو پھن پھناتے جیسے سانپ کی سٹک، پھرا پیٹھ دے کر اور پیچھے نہ دیکھا۔

يَا مُوسَى لَا تَخَفْ إِنِّي لَا يَخَافُ لَدَيَّ الْمُرْسَلُونَ

اے موسیٰ! ڈر نہ کھا، میں جو ہوں میرے پاس نہیں ڈرتے رسول۔

.10

إِلَّا مَنْ ظَلَمَ ثُمَّ بَدَّلَ حُسْنًا بَعْدَ سُوءٍ فَإِنِّي غَفُورٌ رَحِيمٌ

 مگر جس نے زیادتی کی، پھر بدل کر نیکی کی بُرائی کے پیچھے، تو میں بخشنے والا مہربان ہوں۔

.11

وَأَدْخِلْ يَدَكَ فِي جَيْبِكَ تَخْرُجْ بَيْضَاءَ مِنْ غَيْرِ سُوءٍ ۖ

 اور ڈال ہاتھ اپنا اپنے گریبان میں، کہ نکلے چِٹا (سفید) ، نہ کچھ برائی سے۔

فِي تِسْعِ آيَاتٍ إِلَى فِرْعَوْنَ وَقَوْمِهِ ۚ

یہ مل کر نو نشانیاں فرعون اور اسکی قوم کی طرف۔

إِنَّهُمْ كَانُوا قَوْمًا فَاسِقِينَ

بیشک وہ تھے لوگ بے حکم۔

.12

فَلَمَّا جَاءَتْهُمْ آيَاتُنَا مُبْصِرَةً قَالُوا هَذَا سِحْرٌ مُبِينٌ

 پھر جب پہنچیں اُن پاس ہماری نشانیاں سمجھانے کو بولے، یہ جادو ہے صریح(کھلا) ۔

.13

وَجَحَدُوا بِهَا وَاسْتَيْقَنَتْهَا أَنْفُسُهُمْ ظُلْمًا وَعُلُوًّا ۚ

 اور ان سے منکر ہو گئے، اور ان کو یقین جان چکے تھے اپنے جی میں بے انصافی اور غرور سے۔

فَانْظُرْ كَيْفَ كَانَ عَاقِبَةُ الْمُفْسِدِينَ

سو دیکھ، کیسا ہوا آخر بگاڑنے والوں کا؟

.14

وَلَقَدْ آتَيْنَا دَاوُودَ وَسُلَيْمَانَ عِلْمًا ۖ

 اور ہم نے دیا داؤد اور سلیمان کو ایک علم۔

وَقَالَا الْحَمْدُ لِلَّهِ الَّذِي فَضَّلَنَا عَلَى كَثِيرٍ مِنْ عِبَادِهِ الْمُؤْمِنِينَ

اور بولے شکر اﷲ کا جس نے ہم کو بڑھایا اپنے بہت بندوں ایمان والوں پر۔

.15

وَوَرِثَ سُلَيْمَانُ دَاوُودَ ۖ

 اور وارث ہوا سلیمان داؤد کا،

وَقَالَ يَا أَيُّهَا النَّاسُ عُلِّمْنَا مَنْطِقَ الطَّيْرِ وَأُوتِينَا مِنْ كُلِّ شَيْءٍ ۖ

اور بولا، لوگو! ہم کو سکھائی ہے بولی اُڑتے جانوروں کی، اور دیا ہم کو ہر چیز میں سے۔

إِنَّ هَذَا لَهُوَ الْفَضْلُ الْمُبِينُ

بیشک یہی ہے بڑائی صریح (نمایاں فضل) ۔

.16

وَحُشِرَ لِسُلَيْمَانَ جُنُودُهُ مِنَ الْجِنِّ وَالْإِنْسِ وَالطَّيْرِ فَهُمْ يُوزَعُونَ

 اور جمع کئے سلیمان کے پاس اس کے لشکر، جن اور انسان اور اڑتے جانور،پھر ان کی مثلیں بٹیں(صف بندی کی گئی) ۔

.17

حَتَّى إِذَا أَتَوْا عَلَى وَادِ النَّمْلِ قَالَتْ نَمْلَةٌ  يَا أَيُّهَا النَّمْلُ ادْخُلُوا مَسَاكِنَكُمْ

یہاں تک کہ جب پہنچے چیونٹیوں کے میدان پر، کہا، ایک چیونٹی نے، اے چیونٹیو! گھس جاؤ اپنے گھروں میں۔

لَا يَحْطِمَنَّكُمْ سُلَيْمَانُ وَجُنُودُهُ وَهُمْ لَا يَشْعُرُونَ

نہ پیس ڈالے تم کو سلیمان اور اُسکے لشکر، اور ان کو خبر نہ ہو۔

.18

فَتَبَسَّمَ ضَاحِكًا مِنْ قَوْلِهَا

 پھر مسکرا کر ہنس پڑا اُس کی بات سے۔

وَقَالَ رَبِّ أَوْزِعْنِي أَنْ أَشْكُرَ نِعْمَتَكَ الَّتِي أَنْعَمْتَ عَلَيَّ وَعَلَى وَالِدَيَّ

 اور بولا،اے رب! میری قسمت میں دے کہ شکر کروں تیرے احسان کا جو تو نے کیا مجھ پر اور میرے ماں باپ پر،

وَأَنْ أَعْمَلَ صَالِحًا تَرْضَاهُ

اور یہ کہ کروں کام نیک جو تو پسند کرے

 وَأَدْخِلْنِي بِرَحْمَتِكَ فِي عِبَادِكَ الصَّالِحِينَ

 اور ملا لے مجھ کو اپنی مہر (رحمت) سے اپنے نیک بندوں میں۔

.19

وَتَفَقَّدَ الطَّيْرَ فَقَالَ مَا لِيَ لَا أَرَى الْهُدْهُدَ

 اور خبر لی اُڑتے جانوروں کی، تو کہا، کیا ہے جو میں نہیں دیکھتا ہُد ہُد کو؟

 أَمْ كَانَ مِنَ الْغَائِبِينَ

یا ہو رہا وہ غائب۔

.20

لَأُعَذِّبَنَّهُ عَذَابًا شَدِيدًا أَوْ لَأَذْبَحَنَّهُ

 اس کو مار دوں گا زور کی یا ذبح کر ڈالوں گا ،

 أَوْ لَيَأْتِيَنِّي بِسُلْطَانٍ مُبِينٍ

یا لائے میرے پاس کوئی سند صریح(معقول وجہ) ۔

.21

فَمَكَثَ غَيْرَ بَعِيدٍ فَقَالَ  أَحَطْتُ بِمَا لَمْ تُحِطْ بِهِ

 پھر بہت دیر نہ کی کہ آکر کہا، میں لے آیا خبر ایک چیز کی کہ تجھ کو اس کی خبر نہ تھی،

وَجِئْتُكَ مِنْ سَبَإٍ بِنَبَإٍ يَقِينٍ

اور آیا ہوں تیرے پاس سبا سے ایک خبر لے کر۔

.22

إِنِّي وَجَدْتُ امْرَأَةً تَمْلِكُهُمْ

 تحقیق میں نے پائی ایک عورت اُن کے راج پر،

 وَأُوتِيَتْ مِنْ كُلِّ شَيْءٍ وَلَهَا عَرْشٌ عَظِيمٌ

اور اس کو سب چیز ملی ہے، اور اس کا ایک تخت ہے بڑا۔

.23

وَجَدْتُهَا وَقَوْمَهَا يَسْجُدُونَ لِلشَّمْسِ مِنْ دُونِ اللَّهِ

 میں نے پایا کہ وہ اور اسکی قوم سجدہ کرتے ہیں سورج کو اﷲ کے سِوا،

وَزَيَّنَ لَهُمُ الشَّيْطَانُ أَعْمَالَهُمْ فَصَدَّهُمْ عَنِ السَّبِيلِ  فَهُمْ لَا يَهْتَدُونَ

اور بھلے دکھائے ہیں ان کو شیطان نے اُن کے کام، پھر روکا ہے اُن کو راہ سے، سو وہ راہ نہیں پاتے۔

.24

أَلَّا يَسْجُدُوا لِلَّهِ الَّذِي يُخْرِجُ الْخَبْءَ فِي السَّمَاوَاتِ وَالْأَرْضِ 

 کیوں نہ سجدہ کریں اﷲ کوجو نکالتا ہے چھپی چیز آسمانوں میں اور زمین میں،

وَيَعْلَمُ  مَا تُخْفُونَ  وَمَا  تُعْلِنُونَ   

اور جانتا ہے جو چھپاتے ہو اور جو کھولتے ہو۔

.25

اللَّهُ لَا إِلَهَ إِلَّا هُوَ رَبُّ الْعَرْشِ الْعَظِيمِ  ۩

 اﷲ ہے! کسی کی بندگی نہیں اُسکے سوا صاحب تخت بڑے کا۔ (سجدہ)

.26

قَالَ سَنَنْظُرُ أَصَدَقْتَ أَمْ كُنْتَ مِنَ الْكَاذِبِينَ

 کہا ہم دیکھیں گے تُو نے سچ کہا یا تُو جھوٹا ہے۔

.27

اذْهَبْ بِكِتَابِي هَذَا فَأَلْقِهْ إِلَيْهِمْ

لے جا میرا یہ خط اور ڈال دے اُن کی طرف،

 ثُمَّ تَوَلَّ عَنْهُمْ فَانْظُرْ مَاذَا يَرْجِعُونَ

پھر اُن پاس سے ہٹ آ،پھر دیکھ وہ کیا جواب دیتے ہیں۔

.28

قَالَتْ يَا أَيُّهَا الْمَلَأُ إِنِّي أُلْقِيَ إِلَيَّ كِتَابٌ كَرِيمٌ

 کہنے لگی، اے دربار والو! میرے پاس ڈال دیا ہے ایک خط عزّت کا۔

.29

إِنَّهُ مِنْ سُلَيْمَانَ وَإِنَّهُ

 وہ خط ہے سلیمان کی طرف سے اور وہ ہے

 بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيمِ

شروع اﷲ کے نام سے جو بڑا مہربان نہایت رحم والا۔

.30

أَلَّا تَعْلُوا عَلَيَّ وَأْتُونِي مُسْلِمِينَ

کہ زور نہ کرو میرے مقابل، اور چلے آؤ حکم بردار ہو کر۔

.31

قَالَتْ يَا أَيُّهَا الْمَلَأُ أَفْتُونِي فِي أَمْرِي

 کہنے لگی، اے دربار والو! مشورہ دو مجھ کو میرے کام کا۔

مَا كُنْتُ قَاطِعَةً أَمْرًا حَتَّى تَشْهَدُونِ

میں مقرر نہیں کرتی کوئی کام، جب تک تم حاضر نہ ہو۔

.32

قَالُوا نَحْنُ أُولُو قُوَّةٍ وَأُولُو بَأْسٍ شَدِيدٍ

 وہ بولے ہم لوگ زورآور ہیں اور سخت لڑائی والے۔

وَالْأَمْرُ إِلَيْكِ فَانْظُرِي مَاذَا تَأْمُرِينَ

اور کام تیرے اختیار ہے، سو تو دیکھ لے جو حکم کرے۔

.33

قَالَتْ إِنَّ الْمُلُوكَ إِذَا دَخَلُوا قَرْيَةً أَفْسَدُوهَا وَجَعَلُوا أَعِزَّةَ أَهْلِهَا أَذِلَّةً ۖ

 کہنے لگی، بادشاہ جب پیٹھیں (گھسیں) کسی بستی میں، اسکو خراب کریں اور کر ڈالیں وہاں کے سرداروں کو بے عزت۔

وَكَذَلِكَ يَفْعَلُونَ

اور یہی کچھ کریں گے۔

.34

وَإِنِّي مُرْسِلَةٌ إِلَيْهِمْ بِهَدِيَّةٍ فَنَاظِرَةٌ بِمَ يَرْجِعُ الْمُرْسَلُونَ

 اور میں بھیجتی ہوں ان کی طرف کچھ تحفہ، پھر دیکھتی ہوں کیا جواب لے کر پھرتے (واپس آتے) ہیں بھیجے ہوئے۔

.35

فَلَمَّا جَاءَ سُلَيْمَانَ قَالَ أَتُمِدُّونَنِ بِمَالٍ

پھر جب پہنچا سلیمان پاس، بولا کیا تم میری رفاقت کرتے ہو مال سے؟

فَمَا آتَانِيَ اللَّهُ خَيْرٌ مِمَّا آتَاكُمْ

سو جو اﷲ نے مجھ کو دیا ہے بہتر ہے اس سے جو تم کو دیا۔

 بَلْ أَنْتُمْ بِهَدِيَّتِكُمْ تَفْرَحُونَ

نہیں، تم اپنے تحفہ سے خوش رہو۔

.36

ارْجِعْ إِلَيْهِمْ

 پھر (واپس) جا اُن کے پاس،

 فَلَنَأْتِيَنَّهُمْ بِجُنُودٍ لَا قِبَلَ لَهُمْ بِهَا

 اب ہم پہنچے ہیں ان پر ساتھ لشکروں کے، جن کا سامنا نہ ہو سکے اُن سے،

 وَلَنُخْرِجَنَّهُمْ مِنْهَا أَذِلَّةً وَهُمْ صَاغِرُونَ

اور نکال دیں گے ان کو وہاں سے بے عزت کر کر، اور وہ خوار ہوں گے۔

.37

قَالَ يَا أَيُّهَا الْمَلَأُ أَيُّكُمْ يَأْتِينِي بِعَرْشِهَا قَبْلَ أَنْ يَأْتُونِي مُسْلِمِينَ

بولا، اے دربار والو! تم میں کوئی ہے کہ لے آئے میرے پاس اُسکا تخت، پہلے اس سے کہ آئیں میرے پاس حکم بردار ہو کر۔

.38

قَالَ عِفْرِيتٌ مِنَ الْجِنِّ اَنَا اٰتِيۡكَ بِهٖ قَبۡلَ اَنۡ تَقُوۡمَ مِنۡ مَّقَامِكَ‌ۚ

 بولا، ایک راکس (قوی ہیکل) جنوں میں سے، میں لا دیتا ہوں وہ تجھ کو، پہلے اس سے کہ تُو اُٹھے اپنی جگہ سے۔

وَإِنِّي عَلَيْهِ لَقَوِيٌّ أَمِينٌ

اور میں اس کے زور کا ہوں معتبر۔

.39

قَالَ الَّذِي عِنْدَهُ عِلْمٌ مِنَ الْكِتَابِ

 بولا وہ شخص جس کے پاس تھا ایک علم کتاب کا،

 أَنَا آتِيكَ بِهِ قَبْلَ أَنْ يَرْتَدَّ إِلَيْكَ طَرْفُكَ ۚ

میں لا دیتا ہوں تجھ کو وہ پہلے اس سے کہ پھر آئے تیری طرف تیری آنکھ(کہ تُو پلک جھپکے) ۔

فَلَمَّا رَآهُ مُسْتَقِرًّا عِنْدَهُ قَالَ

پھر جب دیکھا وہ دھرا (رکھا ہوا) اپنے پاس کہا،

 هَذَا مِنْ فَضْلِ رَبِّي لِيَبْلُوَنِي أَأَشْكُرُ أَمْ أَكْفُرُ ۖ

یہ میرے رب کے فضل سے، میرے جانچنے کو، کہ میں شکر کرتا ہوں یا نا شکری۔

وَمَنْ شَكَرَ فَإِنَّمَا يَشْكُرُ لِنَفْسِهِ ۖ

اور جو کوئی شکر کرے اپنے واسطے۔

وَمَنْ كَفَرَ فَإِنَّ رَبِّي غَنِيٌّ كَرِيمٌ

اور جو کوئی نا شکری کرے، سو میرا رب بے پرواہ ہے نیک ذات۔

.40

قَالَ نَكِّرُوا لَهَا عَرْشَهَا

 کہا، رُوپ بدل دکھاؤ اس عورت کو اس کے تخت کا ،

 نَنْظُرْ أَتَهْتَدِي أَمْ تَكُونُ مِنَ الَّذِينَ لَا يَهْتَدُونَ

ہم دیکھیں سوجھ پاتی ہے، یا اُن لوگوں میں ہوتی ہے جن کو سوجھ نہیں۔

.41

فَلَمَّا جَاءَتْ قِيلَ أَهَكَذَا عَرْشُكِ ۖ

پھر جب آ پہنچی، کسی نے کہا، کیا ایسا ہی ہے تیرا تخت؟

 قَالَتْ كَأَنَّهُ هُوَ ۚ

بولی، یہ وہی ہے،

وَأُوتِينَا الْعِلْمَ مِنْ قَبْلِهَا وَكُنَّا مُسْلِمِينَ

اور ہم کو معلوم ہو چکا آگے سے، اور ہم ہو چکے حکم بردار۔

.42

وَصَدَّهَا مَا كَانَتْ تَعْبُدُ مِنْ دُونِ اللَّهِ ۖ

 اور بند کیا اس کو ان چیزوں سے جو پوجتی تھی اﷲ کے سوا،

إِنَّهَا كَانَتْ مِنْ قَوْمٍ كَافِرِينَ

البتہ وہ تھی منکر لوگوں میں۔

.43

قِيلَ لَهَا ادْخُلِي الصَّرْحَ ۖ

 کسی نے کہا اس عورت کو، اندر چل محل میں۔

فَلَمَّا رَأَتْهُ حَسِبَتْهُ لُجَّةً وَكَشَفَتْ عَنْ سَاقَيْهَا ۚ

پھر جب دیکھا اس کو، خیال کیا وہ پانی ہے کھڑا، اور کھولیں اپنی پنڈلیاں۔

قَالَ إِنَّهُ صَرْحٌ مُمَرَّدٌ مِنْ قَوَارِيرَ ۗ

کہا یہ تو ایک محل ہے، جڑے ہوئے اس میں شیشے۔

قَالَتْ رَبِّ إِنِّي ظَلَمْتُ نَفْسِي وَأَسْلَمْتُ مَعَ سُلَيْمَانَ لِلَّهِ رَبِّ الْعَالَمِينَ

بولی، اے رب! میں نے بُرا کیا ہے اپنی جان کا، اور حکم بردار ہوئی ساتھ سلیمان کے، اﷲ کے آگے جو رب سارے جہان کا۔

.44

وَلَقَدْ أَرْسَلْنَا إِلَى ثَمُودَ أَخَاهُمْ صَالِحًا أَنِ اعْبُدُوا اللَّهَ

 اور ہم نے بھیجا تھا ثمود کی طرف ان کا بھائی صالح کہ بندگی کرو اﷲ کی،

 فَإِذَا هُمْ فَرِيقَانِ يَخْتَصِمُونَ

پھر وہ تو دو جتھے ہو کر لگے جھگڑنے۔

.45

قَالَ يَا قَوْمِ لِمَ تَسْتَعْجِلُونَ بِالسَّيِّئَةِ قَبْلَ الْحَسَنَةِ ۖ

 کہا اے قوم! کیوں شتاب (جلدی) مانگتے ہو بُرائی پہلے بھلائی سے؟

لَوْلَا تَسْتَغْفِرُونَ اللَّهَ لَعَلَّكُمْ تُرْحَمُونَ

کیوں نہیں گناہ بخشواتے اﷲ سے شاید تم پر رحم ہو۔

.46

قَالُوا اطَّيَّرْنَا بِكَ وَبِمَنْ مَعَكَ ۚ

بولے، ہم نے بد (منحوس) قدم دیکھا تجھ کو اور تیرے ساتھ والوں کو۔

 قَالَ طَائِرُكُمْ عِنْدَ اللَّهِ ۖ

کہا، تمہاری بری قسمت اﷲ کے پاس ہے،

بَلْ أَنْتُمْ قَوْمٌ تُفْتَنُونَ

کوئی نہیں، تم لوگ جانچے جاتے ہو۔

.47

وَكَانَ فِي الْمَدِينَةِ تِسْعَةُ رَهْطٍ يُفْسِدُونَ فِي الْأَرْضِ وَلَا يُصْلِحُونَ

 اور تھے اس شہر میں نو شخص، خرابی کرتے ملک میں، اور سنوار نہ کرتے۔

.48

قَالُوا تَقَاسَمُوا بِاللَّهِ لَنُبَيِّتَنَّهُ وَأَهْلَهُ

 بولے آپس میں قسم کھاؤ اﷲ کی، مقرر (ضرور) رات کو پڑیں ہم اس پر اور اسکے گھر پر،

ثُمَّ لَنَقُولَنَّ لِوَلِيِّهِ مَا شَهِدْنَا مَهْلِكَ أَهْلِهِ وَإِنَّا لَصَادِقُونَ

پھر کہہ دیں گے اسکا دعوٰی کرنے والے کو، ہم نے نہیں دیکھا جب تباہ ہوا اسکا گھر،اور ہم بیشک سچ کہتے ہیں۔

.49

وَمَكَرُوا مَكْرًا  وَمَكَرْنَا مَكْرًا وَهُمْ لَا يَشْعُرُونَ

 اور انہوں نے بنایا ایک فریب اور ہم نے بنایا ایک فریب، اور ان کو خبر نہیں۔

.50

فَانْظُرْ كَيْفَ كَانَ عَاقِبَةُ مَكْرِهِمْ

 پھر دیکھ! کیسا ہوا آخر انکے فریب کا؟

أَنَّا دَمَّرْنَاهُمْ وَقَوْمَهُمْ أَجْمَعِينَ

کہ اکھاڑ مارا ہم نے ان کو اور ان کی قوم کو ساری۔

.51

فَتِلْكَ بُيُوتُهُمْ خَاوِيَةً بِمَا ظَلَمُوا ۗ

 سو یہ پڑے ہیں ان کے گھر ڈھے (ویران) ہوئے اُن کے انکار سے۔

إِنَّ فِي ذَلِكَ لَآيَةً لِقَوْمٍ يَعْلَمُونَ

البتہ اس میں نشانی ہے ایک لوگوں کو جو جانتے ہیں۔

.52

وَأَنْجَيْنَا الَّذِينَ آمَنُوا وَكَانُوا يَتَّقُونَ

 اور بچا دیا ہم نے ان کو جو یقین لائے تھے، اور بچتے رہے (متقی) تھے۔

.53

وَلُوطًا إِذْ قَالَ لِقَوْمِهِ أَتَأْتُونَ الْفَاحِشَةَ وَأَنْتُمْ تُبْصِرُونَ

 اور لوط کو جب کہا اپنی قوم کو، کیا تم کرتے ہو بے حیائی اور تم دیکھتے ہو۔

.54

أَئِنَّكُمْ لَتَأْتُونَ الرِّجَالَ شَهْوَةً مِنْ دُونِ النِّسَاءِ ۚ

 کیا تم دوڑتے ہو مردوں پر للچا کر، عورتیں چھوڑ کر۔

بَلْ أَنْتُمْ قَوْمٌ تَجْهَلُونَ

کوئی نہیں! تم لوگ بے سمجھ ہو۔

.55

فَمَا كَانَ جَوَابَ قَوْمِهِ إِلَّا أَنْ قَالُوا أَخْرِجُوا آلَ لُوطٍ مِنْ قَرْيَتِكُمْ ۖ

 پھر اور جواب نہ تھا اسکی قوم کا، مگر یہی کہ بولے، نکالو لوط کے گھر والوں کو اپنے شہر سے،

إِنَّهُمْ أُنَاسٌ يَتَطَهَّرُونَ

یہ لوگ ہیں ستھرے رہا (پاکیزہ رہنا) چاہتے۔

.56

فَأَنْجَيْنَاهُ وَأَهْلَهُ إِلَّا امْرَأَتَهُ  قَدَّرْنَاهَا مِنَ الْغَابِرِينَ

پھر بچا دیا ہم نے اس کو اور اسکے گھر کو، مگر اسکی عورت، ٹھہرا دیا تھا ہم نے اس کو رہ جانے والوں میں۔

.57

وَأَمْطَرْنَا عَلَيْهِمْ مَطَرًا ۖ

 اور برسایا ہم نے اُن پر برساؤ۔

فَسَاءَ مَطَرُ الْمُنْذَرِينَ

پھر کیا بُرا برساؤ تھا اُن ڈرائے ہوؤں کا۔

.58

قُلِ الْحَمْدُ لِلَّهِ وَسَلَامٌ عَلَى عِبَادِهِ الَّذِينَ اصْطَفَى ۗ

 تُو کہہ، تعریف ہے اﷲ کو، اور سلام ہے اسکے بندوں پر جنکو اس نے پسند کیا۔

آللَّهُ خَيْرٌ أَمَّا يُشْرِكُونَ

بھلا اﷲ بہتر یا جن کو وہ شریک کرتے ہیں۔

.59

أَمَّنْ خَلَقَ السَّمَاوَاتِ وَالْأَرْضَ

بھلا کس نے بنائے آسمان اور زمین؟

وَأَنْزَلَ لَكُمْ مِنَ السَّمَاءِ مَاءً

اور اتار دیا تم کو آسمان سے پانی؟

فَأَنْبَتْنَا بِهِ حَدَائِقَ ذَاتَ بَهْجَةٍ

پھر اُگائے ہم نے اس سے باغ رونق کے،

 مَا كَانَ لَكُمْ أَنْ تُنْبِتُوا شَجَرَهَا ۗ

تمہارا کام نہ تھا کہ اُگائے ان کے درخت۔

أَإِلَهٌ مَعَ اللَّهِ ۚ

اب کوئی اور حاکم ہے اﷲ کے ساتھ؟

بَلْ هُمْ قَوْمٌ يَعْدِلُونَ

کوئی نہیں! وہ لوگ راہ سے مڑتے ہیں۔

.60

أَمَّنْ جَعَلَ الْأَرْضَ قَرَارًا

بھلا کِس نے بنایا زمین کو ٹھہراؤ،

وَجَعَلَ خِلَالَهَا أَنْهَارًا وَجَعَلَ لَهَا رَوَاسِيَ

اور بنائیں اس کے بیچ ندیاں اور رکھے اس میں بوجھ (پہاڑ)، اور رکھا دو دریا میں اوٹ۔

 وَجَعَلَ بَيْنَ الْبَحْرَيْنِ حَاجِزًا ۗ

أَإِلَهٌ مَعَ اللَّهِ ۚ

اب کوئی حاکم ہے اﷲ کے ساتھ؟

بَلْ أَكْثَرُهُمْ لَا يَعْلَمُونَ

کوئی نہیں! ان بہتوں کو سمجھ نہیں۔

.61

أَمَّنْ يُجِيبُ الْمُضْطَرَّ إِذَا دَعَاهُ وَيَكْشِفُ السُّوءَ  وَيَجْعَلُكُمْ خُلَفَاءَ الْأَرْضِ ۗ

 بھلا کون پہنچتا ہے پھنسے کی پکار کو جب اس کو پکارتا ہےاور اٹھا دیتا ہے برائی، اور کرتا ہے تم کو نائب زمین پر۔

أَإِلَهٌ مَعَ اللَّهِ ۚ

اب کوئی حاکم ہے اﷲ کے ساتھ؟

  قَلِيلًا مَا تَذَكَّرُونَ

تم سوچ کم کرتے ہو۔

.62

أَمَّنْ يَهْدِيكُمْ فِي ظُلُمَاتِ الْبَرِّ وَالْبَحْرِ

 بھلا کون راہ بتاتا ہے تم کو اندھیروں میں جنگل کے اور دریا کے؟

وَمَنْ يُرْسِلُ الرِّيَاحَ بُشْرًا بَيْنَ يَدَيْ رَحْمَتِهِ ۗ

اور کون چلاتا ہے باویں (ہوائیں) خوشخبری لاتیں اُسکی مہر (رحمت) سے آگے؟

أَإِلَهٌ مَعَ اللَّهِ ۚ

اب کوئی حاکم ہے اﷲ کے ساتھ؟

تَعَالَى اللَّهُ عَمَّا يُشْرِكُونَ

اﷲ بہت اُوپر ہے اس سے جو شریک بناتے ہیں۔

.63

أَمَّنْ يَبْدَأُ الْخَلْقَ ثُمَّ يُعِيدُهُ

بھلا کون سرے سے بناتا ہے پھر اس کو دہراتا ہے؟

وَمَنْ يَرْزُقُكُمْ مِنَ السَّمَاءِ وَالْأَرْضِ ۗ

اور کون روزی دیتا ہے تم کو آسمان سے اور زمین سے؟

  أَإِلَهٌ مَعَ اللَّهِ ۚ

اب کوئی حاکم ہے اﷲ کے ساتھ؟

قُلْ هَاتُوا بُرْهَانَكُمْ إِنْ كُنْتُمْ صَادِقِينَ

تُو کہہ، لاؤ اپنی سند اگر تم سچے ہو۔

.64

قُلْ لَا يَعْلَمُ مَنْ فِي السَّمَاوَاتِ وَالْأَرْضِ الْغَيْبَ إِلَّا اللَّهُ ۚ

 تُو کہہ، خبر نہیں رکھتا جو کوئی ہے آسمان اور زمین میں چھپی چیز کی، مگر اﷲ۔

وَمَا يَشْعُرُونَ أَيَّانَ يُبْعَثُونَ

اور ان کو خبر نہیں کب جِلائے (زندہ کئے) جائیں گے؟

.65

بَلِ ادَّارَكَ عِلْمُهُمْ فِي الْآخِرَةِ ۚ

بلکہ ہار گری اُن کی دریافت آخرت میں۔

 بَلْ هُمْ فِي شَكٍّ مِنْهَا ۖ

بلکہ ان کو دھوکہ ہے اس میں۔

بَلْ هُمْ مِنْهَا عَمُونَ

بلکہ وہ اس سے اندھے ہیں۔

.66

وَقَالَ الَّذِينَ كَفَرُوا أَإِذَا كُنَّا تُرَابًا وَآبَاؤُنَا أَئِنَّا لَمُخْرَجُونَ

 اور بولے وہ جو منکر ہیں، کیا جب ہم ہو گئے مٹی اور ہمارے باپ دادے، کیا ہم کو زمین سے نکالنا ہے۔

.67

لَقَدْ وُعِدْنَا هَذَا نَحْنُ وَآبَاؤُنَا مِنْ قَبْلُ

 وعدہ مل چکا ہے اس کا ہم کو اور ہمارے باپ دادوں کو آگے سے،

إِنْ هَذَا إِلَّا أَسَاطِيرُ الْأَوَّلِينَ

اور کچھ نہیں، یہ نقلیں ہیں اگلوں کی۔

.68

قُلْ سِيرُوا فِي الْأَرْضِ فَانْظُرُوا كَيْفَ كَانَ عَاقِبَةُ الْمُجْرِمِينَ

 تُو کہہ پھرو ملک میں تو دیکھو کیسا ہوا آخر گنہگاروں کا۔

.69

وَلَا تَحْزَنْ عَلَيْهِمْ وَلَا تَكُنْ فِي ضَيْقٍ مِمَّا يَمْكُرُونَ

 اور غم نہ کھا اُن پر اور نہ رہ خفگی میں ان کے داؤ بنانے سے۔

.70

وَيَقُولُونَ مَتَى هَذَا الْوَعْدُ إِنْ كُنْتُمْ صَادِقِينَ

 اور کہتے ہیں، کب ہے یہ وعدہ؟ اگر تم سچے ہو۔

.71

قُلْ عَسَى أَنْ يَكُونَ رَدِفَ لَكُمْ بَعْضُ الَّذِي تَسْتَعْجِلُونَ

 تُو کہہ، شاید تمہاری پیٹھ پر پہنچی ہو بعضی چیزیں، جس کی شتابی (جلدی) کرتے ہو۔

.72

وَإِنَّ رَبَّكَ لَذُو فَضْلٍ عَلَى النَّاسِ وَلَكِنَّ أَكْثَرَهُمْ لَا يَشْكُرُونَ

 اور تیرا رب تو فضل رکھتا ہے لوگوں پر، پر اُن میں بہت شکر نہیں کرتے۔

.73

وَإِنَّ رَبَّكَ لَيَعْلَمُ مَا تُكِنُّ صُدُورُهُمْ وَمَا يُعْلِنُونَ

 اور تیرا رب جانتا ہے جو چھپ رہا ہے اُن کے سینوں میں، اور جو کھولتے (ظاہر کرتے) ہیں۔

.74

وَمَا مِنْ غَائِبَةٍ فِي السَّمَاءِ وَالْأَرْضِ إِلَّا فِي كِتَابٍ مُبِينٍ

 اور کوئی چیز نہیں جو غائب ہو آسمان و زمین میں، مگر ہے کھلی کتاب میں۔

.75

إِنَّ هَذَا الْقُرْآنَ يَقُصُّ عَلَى بَنِي إِسْرَائِيلَ أَكْثَرَ الَّذِي هُمْ فِيهِ يَخْتَلِفُونَ

یہ قرآن سناتا ہے بنی اسرائیل کو اکثر، جس میں وہ پھوٹ (اختلاف کر) رہے ہیں۔

.76

وَإِنَّهُ لَهُدًى وَرَحْمَةٌ لِلْمُؤْمِنِينَ

 اور یہ سوجھ (ہدایت) ہے، اور مہر (رحمت) ہے ایمان والوں کو۔

.77

إِنَّ رَبَّكَ يَقْضِي بَيْنَهُمْ بِحُكْمِهِ ۚ

تیرا رب ان میں فیصلہ کرے اپنی حکومت سے،

وَهُوَ الْعَزِيزُ الْعَلِيمُ

اور وہی ہے زبردست سب جانتا۔

.78

فَتَوَكَّلْ عَلَى اللَّهِ ۖ

سو تو بھروسہ کر اﷲ پر۔

إِنَّكَ عَلَى الْحَقِّ الْمُبِينِ

بیشک تُو ہے صحیح کھلی راہ پر۔

.79

إِنَّكَ لَا تُسْمِعُ الْمَوْتَى وَلَا تُسْمِعُ الصُّمَّ الدُّعَاءَ إِذَا وَلَّوْا مُدْبِرِينَ

 تُونہیں سنا سکتا مُردوں کو، اور نہیں سنا سکتا بہروں کو پکار جب پھریں (بھاگیں) پیٹھ دے (پھیر) کر۔

.80

 ‏وَمَا أَنْتَ بِهَادِي الْعُمْيِ عَنْ ضَلَالَتِهِمْ ۖ

 اور نہ تو دکھا سکے اندھوں کو، جب راہ سے بچلیں (پھسلیں) ۔

إِنْ تُسْمِعُ إِلَّا مَنْ يُؤْمِنُ بِآيَاتِنَا فَهُمْ مُسْلِمُونَ

تُو تو سناتا ہے اُس کو جو یقین رکھتا ہو ہماری باتوں پر، سو وہ حکم بردار ہیں۔

.81

وَإِذَا وَقَعَ الْقَوْلُ عَلَيْهِمْ أَخْرَجْنَا لَهُمْ دَابَّةً مِنَ الْأَرْضِ

 او ر جب پڑ چکے گی اُن پر بات، نکالیں گے ہم اُن کے آگے ایک جانور زمین سے،

 تُكَلِّمُهُمْ أَنَّ النَّاسَ كَانُوا بِآيَاتِنَا لَا يُوقِنُونَ

اُن سے باتیں کریگا، اس واسطے کہ لوگ ہماری نشانیاں یقین نہ کرتے تھے۔

.82

وَيَوْمَ نَحْشُرُ مِنْ كُلِّ أُمَّةٍ فَوْجًا مِمَّنْ يُكَذِّبُ بِآيَاتِنَا فَهُمْ يُوزَعُونَ

 اور جس دن گھیر بلائیں گے ہم ہر فرقے سے ایک دَل(گروہ) ، جو جھٹلاتے تھے ہماری باتیں پھر اُن کی مثل بٹے (درجہ بندی ہو) گی۔

.83

حَتَّى إِذَا جَاءُوا قَالَ أَكَذَّبْتُمْ بِآيَاتِي

یہاں تک کہ جب آ پہنچے، فرمایا، کیوں تم نے جھٹلائیں میری باتیں؟

وَلَمْ تُحِيطُوا بِهَا عِلْمًا أَمَّاذَا كُنْتُمْ تَعْمَلُونَ

اور آ نا چکی تھیں تمہاری سمجھ میں، یا کہو کیا کرتے تھے۔

.84

وَوَقَعَ الْقَوْلُ عَلَيْهِمْ بِمَا ظَلَمُوا فَهُمْ لَا يَنْطِقُونَ

 اور پڑھ چکی ان پر بات، اس واسطے کہ انہوں نے شرارت کی، سو وہ کچھ نہیں بولتے۔

.85

أَلَمْ يَرَوْا أَنَّا جَعَلْنَا اللَّيْلَ لِيَسْكُنُوا فِيهِ وَالنَّهَارَ مُبْصِرًا ۚ

 کیا نہیں دیکھتے، کہ ہم نے بنائی رات کہ اس میں چین پکڑیں اور دن بنایا دیکھنے کو۔

إِنَّ فِي ذَلِكَ لَآيَاتٍ لِقَوْمٍ يُؤْمِنُونَ

البتہ اس میں نشانیاں ہیں ان لوگوں کو جو یقین کرتے ہیں۔

.86

وَيَوْمَ يُنْفَخُ فِي الصُّورِ فَفَزِعَ مَنْ فِي السَّمَاوَاتِ وَمَنْ فِي الْأَرْضِ إِلَّا مَنْ شَاءَ اللَّهُ ۚ

جس دن پھونکا جائے نر سنگا، تو گھبرا جائے جو کوئی ہیں آسمان اور زمین میں، مگر جس کو اﷲ چاہے۔

وَكُلٌّ أَتَوْهُ دَاخِرِينَ

اور سب چلے آئیں اس کے آگے عاجزی سے۔

.87

وَتَرَى الْجِبَالَ تَحْسَبُهَا جَامِدَةً  وَهِيَ تَمُرُّ مَرَّ السَّحَابِ ۚ

 اور تو دیکھتا ہے پہاڑ، جانتا ہے وہ جم رہے ہیں، اور وہ چلیں گے جیسے چلے بدلی۔

صُنْعَ اللَّهِ الَّذِي أَتْقَنَ كُلَّ شَيْءٍ ۚ

کاریگری اﷲ کی، جس نے سادھی ہے ہر چیز۔

إِنَّهُ خَبِيرٌ بِمَا تَفْعَلُونَ

اس کو خبر ہے جو تم کرتے ہو۔

.88

مَنْ جَاءَ بِالْحَسَنَةِ فَلَهُ خَيْرٌ مِنْهَا

 جو کوئی لایا بھلائی تو اس کو ملنا ہے اس سے بہتر۔

 وَهُمْ مِنْ فَزَعٍ يَوْمَئِذٍ آمِنُونَ

اور ان کو گھبراہٹ سے اس دن چین ہے۔

.89

وَمَنْ جَاءَ بِالسَّيِّئَةِ فَكُبَّتْ وُجُوهُهُمْ فِي النَّارِ

 اور جو کوئی لایا برائی، سو اوندھے ڈالے ہیں ان کے منہ آگ میں۔

 هَلْ تُجْزَوْنَ إِلَّا مَا كُنْتُمْ تَعْمَلُونَ

وہی بدلہ پاؤ گے جو کچھ کرتے تھے۔

.90

إِنَّمَا أُمِرْتُ أَنْ أَعْبُدَ رَبَّ هَذِهِ الْبَلْدَةِ الَّذِي حَرَّمَهَا وَلَهُ كُلُّ شَيْءٍ ۖ

مجھ کو یہی حکم ہے، کہ بندگی کروں اس شہر کے مالک کی، جس نے رکھا اس کو ادب کا، اور اسی کی ہے ہر چیز۔

وَأُمِرْتُ أَنْ أَكُونَ مِنَ الْمُسْلِمِينَ

اور حکم ہے کہ رہوں حکم برداروں میں۔

.91

وَأَنْ أَتْلُوَ الْقُرْآنَ ۖ

 اور یہ کہ سنا دوں قرآن۔

 فَمَنِ اهْتَدَى فَإِنَّمَا يَهْتَدِي لِنَفْسِهِ ۖ

پھر جو کوئی راہ پر آیا، سو راہ پر آئے گا اپنے بھلے کو۔

وَمَنْ ضَلَّ فَقُلْ إِنَّمَا أَنَا مِنَ الْمُنْذِرِينَ

اور جو کوئی بہکا رہا تو کہہ دے میں یہی ہوں ڈر سنانے والا۔

.92

وَقُلِ الْحَمْدُ لِلَّهِ سَيُرِيكُمْ آيَاتِهِ فَتَعْرِفُونَهَا ۚ

اور کہہ، تعریف ہے سب اﷲ کو، آگے دکھادے گا تم کو اپنے نمونے، تو ان کو پہچان لو گے۔

وَمَا رَبُّكَ بِغَافِلٍ عَمَّا تَعْمَلُونَ

اور تیرا رب بے خبر نہیں ان کاموں سے، جو کرتے ہو۔

*********

.93

Copy Rights:

Zahid Javed Rana, Abid Javed Rana, Lahore, Pakistan

Visits wef 2016

AmazingCounters.com