القرآن الحکیم (اردو ترجمہ)

حضرت شاہ عبدالقادر

سورۃ الاحزاب

Previous           Index           Next

بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيمِ

 

 اے نبی! ڈر اﷲ سے اور کہا نہ مان منکروں کا اور دغابازوں کا۔

مقرر (بلاشبہ) اﷲ ہے سب جانتا حکمتوں والا۔

.1

 اور چل اُسی پر جو حکم (وحی) آئے تجھ کو تیرے رب سے۔

مقرر (بیشک) اﷲ تمہارے کام کی خبر رکھتا ہے۔

.2

 اور بھروسہ رکھ اﷲ پر۔ اور اﷲ بس (کافی) ہے کام بنانے والا ۔

.3

 اﷲ نے رکھے نہیں کسی مرد کے دو دل اس کے اندر۔

اور نہیں کیا تمہاری جورؤوں کو جن کو ماں کہہ بیٹھے ہو، سچ تمہاری مائیں۔

اور نہیں کیا تمہارے لے پالکوں(منہ بولے) کو تمہارے بیٹے۔

یہ تمہاری بات ہے اپنے منہ کی(اپنا قول) ۔

اور اﷲ کہتا ہے ٹھیک (حق) بات اور وہی سوجھاتا ہے راہ۔

.4

پکارو لے پالکوں کو ان کے باپ کا کر کر(کی نسبت سے) ، یہی پورا انصاف ہے، اﷲ کے ہاں۔

پھر اگر نہ جانتے ہو اُن کے باپ کو تو تمہارے بھائی ہیں دین میں، اور رفیق ہیں۔

اور گناہ نہیں تم پر جس چیز میں چُوک جاؤ، پر وہ جو دل سے ارادہ کیا۔

اور ہے اﷲ بخشنے والا مہربان۔

.5

 نبی سے لگاؤ ہے ایمان والوں کو زیادہ اپنی جان سے، اور اُسکی عورتیں انکی مائیں ہیں۔

اور ناتے والے (رشتے دار) ایک دوسرے سے لگاؤ رکھتے ہیں، اﷲ کے حکم میں،

زیادہ سب ایمان والوں اور وطن چھوڑنے والوں سے،

مگر یہ کہ کیا چاہو اپنے رفیقوں سے احسان۔

یہ ہے کتاب میں لکھا۔

.6

 اور جب لیا ہم نے نبیوں سے ان کا قرار اور تجھ سے اور نوح سے

اور ابراہیم سے اور موسیٰ سے اور عیسیٰ سے جو بیٹا مریم کا۔

اور لیا ہم نے اُن سے گاڑھا قرار (پختہ عہد) ۔

.7

تا (کہ) پوچھے اﷲ سچوں سے اُن کا سچ۔

اور رکھی ہے منکروں کو دکھ کی مار۔

.8

 اے ایمان والو! یاد کرو احسان اﷲ کا اپنے اُوپر،جب آئیں تم پر فوجیں،

پھر بھیجی ہم نے ان پر باؤ (آندھی) ، اور وہ فوجیں جو تم نے نہیں دیکھیں۔

اور ہے اﷲ جو کچھ کرتے ہو دیکھتا۔

.9

 جب آئے تم پر اُوپر کی طرف سے اور نیچے سے،

اور جب ڈگنے لگیں (پتھرا گئیں) آنکھیں اور پہنچے دل گلے تک ،

اور اٹکلنے (گمان کرنے لگے) لگے تم اﷲ پر کئی کئی اٹکلیں(طرح طرح کے گمان) ۔

.10

 وہاں جانچے گئے ایمان والے اور جھڑجھڑائے گئے زور کا جھڑجھڑانا۔

.11

 اور جب کہنے لگے منافق اور جن کے دلوں میں روگ ہے،

جو وعدہ دیا تھا ہم کو اﷲ نے اور اس کے رسول نے سب فریب تھا۔

.12

 اور جب کہنے لگے ایک لوگ ان میں، اے یثرب والو! تم کو ٹھکانا نہیں، سو پھر (لوٹ) چلو۔

اور رخصت مانگنے لگے ایک لوگ اُن میں نبی سے، کہنے لگے، ہمارے گھر کھلے پڑے ہیں۔اور وہ کھلے نہیں پڑے۔

غرض اور نہیں مگر بھاگنا۔

.13

 اور اگر شہر میں کوئی پیٹھ(گھس) آئے کناروں (اطراف) سے،پھر اُن سے چاہے دین سے بچلنا(گمراہی) ، تو لے لیں،

اور ڈھیل نہ کریں اس میں مگر تھوڑی۔

.14

 اور اقرار کر چکے تھے اﷲ سے آگے کہ نہ پھیریں گے پیٹھ۔

اور اﷲ کے اقرار کی پُوچھ ہونی ہے۔

.15

 تُو کہہ، کام نہ آئے گا تم کو بھاگنا،

اگر بھاگو گے مرنے (موت) سے یا مارے (قتل ہو) جانے سے اور پھر بھی پھل نہ پاؤ گے، مگر تھوڑے دنوں۔

.16

 تُو کہہ، کون ہے تم کو بچائے اﷲ سے اگر چاہے تم پر بُرائی یا چاہے تم پر مہر(مہر بان ہونا) ۔

اور نہ پائیں گے اپنے واسطے اﷲ کے سِوا کوئی حمائتی نہ مددگار۔

.17

 اﷲ کو معلوم ہیں جو اٹکاتے (رکاوٹیں ڈالتے) ہیں تم میں، اور کہتے ہیں اپنے بھائیوں کو، چلے آؤ ہمارے پاس۔

اور لڑائی میں نہیں آتے مگر کبھی (کم) ۔

.18

دریغ (حسرت) رکھتے ہیں تمہاری طرف سے،

پھر جب آئے ڈر کا وقت، تو تُو دیکھے تکتے (دیکھتے) ہیں تیری طرف،

ڈگراتی (گھومتی) ہیں آنکھیں اُن کی، جیسے کسی پر آئے بیہوشی موت کی،

پھر جب جاتا رہے ڈر کا وقت، چڑھ چڑھ کر بولیں تم پر تیز تیز زبانوں سے، ڈھکے پڑتے (حریص) ہیں مال پر،

وہ لوگ یقین نہیں لائے، پھر اکارت (ضائع) کر ڈالے اﷲ نے اُن کے کئے (اعمال) ۔

اور یہ ہے اﷲ پر آسان۔

.19

جانتے ہیں، فوجیں(حملہ آور لشکر) نہیں گئیں۔

اور اگر آ جائیں فوجیں (حملہ آور لشکر) تو آرزو کریں، کسی طرح باہر گئے ہوں گاؤں میں،پوچھا کریں تمہاری خبریں۔

اور اگر ہوں تم میں لڑائی نہ کریں مگر تھوڑے ۔

.20

تم کو بھلی تھی سیکھنی رسول کی چال،

جو کوئی اُمید رکھتا ہے اﷲ کی اور پچھلے دن کی اور یاد کرتا ہے اﷲ کو بہت سا۔

.21

 اور جب دیکھیں مسلمانوں نے فوجیں(دُشمن کا لشکر) ، بولے،

یہ وہی ہے جو وعدہ دیا تھا ہم کو اﷲ نے اور اُس کے رسول نے، اور سچ کہا اﷲ نے اور اس کے رسول نے،

اور ان کو اور بڑھا یقین اور اطاعت کرنا۔

.22

 ایمان والوں میں کتنے مرد ہیں کہ سچ کر دکھایا جس پر قول کیا تھا اﷲ سے۔

پھر کوئی ہے ان میں کہ پورا کر چکا اپنا ذمّہ، اور کوئی ہے ان میں راہ دیکھتا۔

اور بدلہ نہیں ایک ذرہ۔

.23

 تا (کہ) بدلہ دے اﷲ سچوں کو اُن کے سچ کا،

اور عذاب کرے منافقوں کو اگر چاہے، یا توبہ ڈالے اُن کے دل پر،

بیشک اﷲ ہے بخشتا مہربان۔

.24

اور پھیر (واپس بھیج) دیا اﷲ نے منکروں کو، اپنے غصہ میں بھرے، ہاتھ نہ لگی کچھ بھلائی۔

اور آپ اُٹھا لی اﷲ نے مسلمانوں کی لڑائی۔

اور ہے اﷲ زورآور زبردست۔

.25

 اور اتار دیا انکو جو ان کے رفیق ہوئے تھے کتاب والے، اُنکی گڑھیوں (قلعوں) سے،اور ڈالی اُنکے دل میں دھاک،

 کتنوں کو تم جان سے مارنے لگے، اور کتنوں کو بندی (قیدی) کیا۔

.26

اور تم کو ملائی (وراثت کی) اُنکی زمین، اور اُنکے گھر، اور اُنکے مال، اور ایک زمین جس پر نہیں پھیرے تم نے اپنے قدم،

اور ہے اﷲ سب چیز کر سکتا۔

.27

 اے نبی! کہہ دے اپنی عورتوں کو،

اگر تم ہو چاہتیاں دنیا کا جینا اور یہاں کی رونق،تو آؤ کچھ فائدہ دوں تم کو اور رخصت کروں بھلی طرح سے۔

.28

 اور اگر تم ہو چاہتیاں اﷲ کو اور اس کے رسول کو اور پچھلے (آخرت کے) گھر کو،

تو اﷲ نے رکھ چھوڑا ہے اُن کو جو تم میں نیکی پر ہیں نیگ (اجر) بڑا۔

.29

 اے نبی کی عورتو!

جو کوئی کر لائے تم میں کام بے حیائی کا صریح، دُونی ہو اس کو مار دوہری۔

اور ہے یہ اﷲ پر آسان۔

.30

 اور جو کوئی تم میں اطاعت کرے اﷲ کی اور اسکے رسول کی، اور کرے کام نیک، دیں ہم اُسکو اس کا نیگ (اجر) دو بار،

اور رکھی ہے ہم نے اس کے واسطے روزی عزت کی۔

.31

 اے نبی کی عورتو! تم نہیں ہو جیسے ہر کوئی عورتیں،

اگر تم ڈر رکھو، سو تم دب کر نہ کہو بات پھر لالچ کرے کوئی جس کے دل میں روگ ہے،

اور کہو بات معقول۔

.32

 اور قرار پکڑو اپنے گھروں میں، اور دکھائی نہ پھرو جیسا دکھانا دستور تھا پہلے وقت نادانی کے۔

اور کھڑی رکھو نماز، اور دیتی رہو زکوٰۃ، اور اطاعت میں رہو اﷲ کی اور اس کے رسول کی۔

اﷲ یہی چاہتا ہے، کہ دور کرے تم سے گندی باتیں، اِس گھر والو،اور ستھرا کرے تم کو ایک ستھرائی سے۔

.33

 اور یاد کرو جو پڑھی جاتی ہیں تمہارے گھروں میں اﷲ کی باتیں اور عقلمندی۔

مقرر (بیشک) اﷲ ہے بھید جانتا خبردار۔

.34

تحقیق مسلمان مرد اور مسلمان عورتیں اور ایماندار مرد اور ایماندار عورتیں

اور بندگی کرنے والے مرد اور بندگی کرنے والی عورتیں اور سچے مرد اور سچی عورتیں

اور محنت سہنے والے مرد اور محنت سہنے والی عورتیں اور دبے رہنے والے مرد اور دبی رہنے والی عورتیں

اور خیرات کرنے والے مرد اور خیرات کرنے والی عورتیں اور روزہ دار مرد اور روزہ دار عورتیں

اور تھامنے والے مرد اپنی شہوت کی جگہ اور تھامنے والی عورتیں

اور یاد کرنے والے مرد اﷲ کو بہت سا اور یاد کرنے والی عورتیں،

رکھی ہے اﷲ نے اُن کے واسطے معافی اور نیگ (اجر) بڑا۔

.35

 اور کام نہیں کسی ایماندار مرد کا نہ عورت کا، جب ٹھہرا دے اﷲ اور اُسکا رسول کچھ کام،کہ اُنکو رہے اختیار اپنے کام کا۔

اور جو کوئی بے حکم چلا اﷲ کے اور اُس کے رسول کے، سو راہ بھولا صریح چُوک۔

.36

 اور جب تُو کہنے لگا اس شخص کو جس پر اﷲ نے احسان کیا، اور تو نے احسان کیا،

رہنے دے اپنے پاس اپنی جورو (بیوی) ، اور ڈر اﷲ سے،

اور تُو چھپاتا تھا اپنے دل میں ایک چیز، جو اﷲ اس کو کھولا چاہتا ہے،

اور تُو ڈرتا تھا لوگوں سے۔ اور اﷲ سے زیادہ چاہیئے ڈرنا تجھ کو،

پھر جب زید تمام کر چکا اس عورت سے اپنی غرض، ہم نے وہ تیرے نکاح میں دی،

تا (کہ) نہ رہے سب مسلمانوں پر گناہ نکاح کر لینا جوروئیں (بیویاں) اپنے لے پالکوں (منہ بولے بیٹوں) کی،

جب وہ تمام کریں اُن سے اپنی غرض۔

اور ہے اﷲ کا حکم کرنا۔

.37

 نبی پر کچھ مضائقہ نہیں اس بات میں، جو ٹھہرا (فرض کر) دی اﷲ نے اس کے واسطے۔

دستور رہا ہے اﷲ کا ان لوگوں (انبیاء) میں جو گزرے پہلے۔

اور ہے حکم اﷲ کا مقرر ٹھہر چکا(قطعی طے شدہ) ۔

.38

 وہ (انبیاء) جو پہنچاتے ہیں پیغام اﷲ کے اور ڈرتے ہیں اس سے، اور نہیں ڈرتے کسی سے سوا اﷲ کے۔

اور بس (کافی) ہے اﷲ کفایت (محاسبہ) کرنے والا۔

.39

محمدؐ باپ نہیں کسی کا تمہارے مردوں میں لیکن رسول ہے اﷲ کا، اور مُہر سب نبیوں پر(خاتم النَّبِین) ۔

اور ہے اﷲ سب چیز جانتا۔

.40

 اے ایمان والو! یاد کرو اﷲ کو بہت سی یاد۔

.41

 اور پاکی بولو (تسبیح کرو) اس کی صبح اور شام۔

.42

 وہی ہے جو رحمت بھیجتا ہے تم پر، اور اسکے فرشتے (بھی تم پر دعاء رحمت بھیجتے ہیں)کہ نکالے تم کو اندھیروں سے اُجالے میں۔

اور ہے ایمان والوں پر مہربان۔

.43

 دُعا اُن کی، جس دن اُس سے ملیں گے، سلام ہے۔

اور رکھا ہے اُن کے واسطے نیگ (اجر) عزت کا۔

.44

 اے نبی! ہم نے تجھ کو بھیجا بتانے والا اور خوشی سنانے والا، اور ڈرانے والا اور بلانے والا۔

.45

 اﷲ کی طرف اس کے حکم سے اور چراغ چمکتا۔

.46

 اور خوشی سُنا ایمان والوں کو کہ ان کو ہے خدا کی طرف سے بڑی بزرگی۔

.47

 اور کہا نہ مان منکروں کا اور دغابازوں کا، اور چھوڑ دے ان کو ستانا، اور بھروسا کر اﷲ پر۔

اور اﷲ بس (کافی) ہے کام بنانے والا۔

.48

 اے ایمان والو! جب تم نکاح کرو مسلمان عورتوں کو، پھر ان کو چھوڑو، پہلے اس سے کہ ہاتھ لگاؤ ان کو ،

سو اُن پر حق نہیں تمہارا عدّت میں بیٹھنا، کہ گنتی پوری کرواؤ ۔

سو دو ان کو کچھ فائدہ اور رخصت کرو بھلی طرح۔

.49

 اے نبی! ہم نے حلال رکھیں تجھ کو تمہاری عورتیں جنکے مہر تو دے چکا،

اور جو مال ہو تیرے ہاتھ کا (لونڈیاں) اور جو ہاتھ لگا دے تجھ کو اﷲ،

اور تیرے چچا کی بیٹیاں اور پھوپھیوں کی بیٹیاں، اور تیرے ماموں کی بیٹیاں، اور خالاؤں کی بیٹیاں

جنہوں نے وطن چھوڑا (ہجرت کی) تیرے ساتھ،

اور جو کوئی عورت ہو مسلمان، اگر بخشے (ہبہ کرے) اپنی جان نبی کو، اگر نبی چاہے کہ اسکو نکاح میں لے۔

(یہ رعایت) نری تجھی کو، سوا سب مسلمانوں کے ۔

ہم کو معلوم ہے، جو ٹھہرا دیا ہم نے اُن پر ان کی عورتوں میں، اور ان کے ہاتھ کے مال (لونڈیوں) میں،

(تجھے اس سے مستثنٰی کر دیا) تا (کہ) نہ رہے تجھ پر تنگی۔

اور ہے اﷲ بخشنے والا مہربان۔

.50

(تجھ کو اختیار ہے) پیچھے (خود سے الگ) رکھ دے تو جس کو چاہے ان میں، اور جگہ دے اپنے پاس جس کو چاہے،

اور جس کو جی چاہے تیرا (پاس بلا لو) ان میں سے جو کنارے (الگ) کر دی تھیں، تو کچھ گناہ نہیں تجھ پر۔

اس میں لگتا ہے کہ ٹھنڈی رہیں آنکھیں اُن کی، اور غم نہ کھائیں، اور راضی رہیں اس پر جو تو نے دیا ساریاں (سب)۔

اور اﷲ جانتا ہے جو تمہارے دلوں میں ہے۔

اور ہے اﷲ سب جانتا تحمل والا۔

.51

حلال نہیں تجھ کو عورتیں اس پیچھے، اور نہ یہ کہ اُن کے بدلے اور کرے عورتیں،

اگرچہ خوشی (اچھی)لگے تجھ کو اُن کی صورت، مگر جو مال ہو تیرے ہاتھ کا۔

اور ہے اﷲ ہر چیز پر نگہبان۔

.52

 اے ایمان والو!

مت جاؤ گھروں میں نبی کے،مگر جو تم کو حکم ہو کھانے کے واسطے، نہ راہ دیکھتے اسکے پکنے کی،

لیکن جب بلائے تب جاؤ،

پھر جب کھا چکو، تو آپ آپ کو چلے جاؤ، اور نہ آپس میں جی لگاتے باتوں میں۔

اس بات سے تمہاری تکلیف تھی پیغمبر کو، پھر تم سے شرم کرتا،اور اﷲ شرم نہیں کرتا ٹھیک بات بتانے میں ۔

اور جب مانگنے جاؤ بیبیوں سے کچھ چیز کام کی، تو مانگ لو پردے کے باہر سے۔

اس میں خوب ستھرائی ہے تمہارے دل کو، اور ان کے دل کو۔

اور تم کو نہیں پہنچتا کہ تکلیف دو اﷲ کے رسول کو،اور نہ یہ کہ نکاح کرو اسکی عورتوں کو اسکے پیچھے کبھی۔

البتہ یہ بات تمہاری اﷲ کے ہاں بڑا گناہ ہے۔

.53

 اگر کھول کر کہو تم کسی چیز کو، یا اس کو چھپاؤ سو اﷲ ہے ہر چیز جانتا۔

.54

 گناہ نہیں ان عورتوں کو سامنے ہونے کا اپنے باپوں سے اور نہ اپنے بیٹوں سے،

اور نہ اپنے بھائیوں سے اور نہ اپنے بھائی کے بیٹوں سے،اور نہ اپنے بہن کے بیٹوں سے،

 اور نہ اپنی عورتوں سے، اور نہ اپنے ہاتھ کے مال سے،

اور ڈرتی رہو اﷲ سے۔

بیشک اﷲ کے سامنے ہے ہر چیز۔

.55

 اﷲ اور اس کے فرشتے رحمت بھیجتے ہیں رسول پر۔

اے ایمان والو! رحمت بھیجو اس پر، اور سلام بھیجو سلام کہہ کر۔

.56

جو لوگ ستاتے ہیں اﷲ کو اور اس کے رسول کو، ان کو پھٹکارا اﷲ نے دنیا میں اور آخرت میں،

اور رکھی ہے ان کے واسطے ذلّت کی مار۔

.57

 اور جو لوگ تہمت لگاتے ہیں مسلمان مردوں کو، اور مسلمان عورتوں کو، بن کئے کام،

تو اُٹھایا انہوں نے بوجھ جھوٹ کا اور صریح گناہ کا۔

.58

 اے نبی! کہہ دے اپنی عورتوں کو اور اپنی بیٹیوں کو اور مسلمان عورتوں کو،نیچی لٹکا لیں اپنے اُوپر تھوڑی سی اپنی چادریں۔

اس میں لگتا ہے کہ پہچانی پڑیں، تو کوئی نہ ستائے۔

اور ہے اﷲ بخشنے والا مہربان۔

.59

 کبھی باز نہ آئے منافق، اور جن کے دل میں روگ ہے،اور جھوٹ اڑانے والے مدینے میں، تو ہم لگا دیں گے اُن کے پیچھے،

پھر نہ رہنے پائیں گے تیرے ساتھ اس شہر میں مگر تھوڑے دنوں۔

.60

پھٹکارے ہوئے۔

جہاں پائے گئے پکڑے گئے اور مارے گئے جان سے ۔

.61

دستور پڑا ہوا اﷲ کا، اُن لوگوں میں جو آگے ہو چکے ہیں۔

اور تُو نہ دیکھے گا اﷲ کی چال (سنت) بدلتی۔

.62

 لوگ پوچھتے ہیں تجھ سے قیامت کو۔

تُو کہہ، اس کی خبر ہے اﷲ ہی پاس۔

اور تُو کیا جانے، شاید وہ گھڑی پاس ہی ہو۔

.63

 بیشک اﷲ نے پھٹکارا ہے منکروں کو، اور رکھی ہے ان کے واسطے دہکتی آگ۔

.64

 رہا کریں اس میں ہمیشہ۔

نہ پائیں کوئی حمایتی نہ مددگار۔

.65

 جس دن اُوندھے ڈالے اُن کے منہ آگ میں، کہیں گے،

کسی طرح ہم نے کہا مانا ہوتا اﷲ کا اور کہا مانا ہوتا رسول کا۔

.66

 اور کہیں گے، اے رب! ہم نے کہا مانا اپنے سرداروں کا، اپنے بڑوں کا، پھر انہوں نے چوکا (بھُلا) دی ہم سے راہ۔

.67

 اے رب! ان کو دے دُونی مار اور پھٹکار اُن کو بڑی پھٹکار۔

.68

 اے ایمان والو! تم مت ہو ویسے، جنہوں نے ستایا موسیٰ  کو،پھر بے عیب دکھایا انکو اﷲ نے اُن کے کہنے سے۔

اور تھا اﷲ کے ہاں آبرو رکھتا۔

.69

 اے ایمان والو! ڈرتے رہو اﷲ سے، اور کہو بات سیدھی۔

.70

کہ سنوار دے تم کو تمہارے کام، اور بخشے تم کو تمہارے گناہ۔

اور جو کوئی کہے پر چلا اﷲ کے اور اُسکے رسول کے اس نے پائی بڑی مراد۔

.71

 ہم نے دکھائی امانت آسمان کو، اور زمین کو اور پہاڑوں کو،پھر سب نے قبول نہ کیا کہ اس کو اٹھائیں اور اس سے ڈر گئے،

 اور اٹھا لیا اس کو انسان نے۔

یہ ہے بڑا بے ترس نادان۔

.72

تا (کہ) عذاب کرے اﷲ منافق مردوں کو، اور عورتوں کو، اور شریک والے مردوں کو اور عورتوں کو،

اور معاف کرے اﷲ ایماندار مردوں کو اور عورتوں کو۔

اور ہے اﷲ بخشنے والا مہربان۔

*********

.73

Copy Rights:

Zahid Javed Rana, Abid Javed Rana, Lahore, Pakistan

Visits wef 2016

AmazingCounters.com