القرآن الحکیم (اردو ترجمہ)

حضرت شاہ عبدالقادر

سورۃ المجادلہ

Previous           Index           Next

بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيمِ

 

سُن لی اﷲ نے بات اس عورت کی جو جھگڑتی ہے تجھ سےاپنے خاوند پر اور جھینکتی (فریادی) ہے اﷲ کے آگے،

اور اﷲ سنتا ہے سوال جواب تم دونوں کا۔

بے شک اﷲ سنتا ہے دیکھتا۔

.1

 جو لوگ ماں کہہ بیٹھیں تم میں اپنی عورتوں کو وہ نہیں اُن کی مائیں۔

مائیں وہی ہیں جنہوں نے اُن کو جنا۔

اور وہ بولتے ہیں ایک ناپسند بات اور جھوٹ۔

اور اﷲ معاف کرتا ہے بخشنے والا۔

.2

اور جو ماں کہہ بیٹھیں اپنی عورتوں کو ، پھر وہی کام چاہیں (رجوع کریں) جس کو کہا ہے،

 تو آزاد کرنا ایک بردہ (غلام)، پہلے اس سے کہ آپس میں ہاتھ لگائیں۔

 اس سے تم کو نصیحت ہو گی۔

اور اﷲ خبر رکھتا ہے جو کچھ تم کرتے ہو۔

.3

پھر جو کوئی نہ پائے (غلام) تو روزہ (رکھے) دو  مہینے کا لگاتار، پہلے اس سے کہ آپس میں چھوئیں۔

پھر جو کوئی نہ کر سکے(رکھ سکے روزے) تو کھانا دینا ہے ساٹھ محتاج کا۔

یہ اس واسطے کہ حکم مانو اﷲ کا اور اسکے رسول کا۔

اور یہ ساری حدیں باندھی ہیں اﷲ کی اور منکروں کو دکھ کی مار ہے۔

.4

جو لوگ مخالف ہوتے ہیں اﷲ سے اور اسکے رسول سے ،  وہ رد (ذلیل و خوار) ہوئے، جیسے کہ رد ہوئے ہیں ان سے پہلے،

اور ہم نے اُتاریں ہیں آیتیں (احکام) صاف۔

اور منکروں کو ذلت کی مار ہے۔

.5

جس دن اُٹھائے گا اﷲ ان سب کو، پھر جتائے گا ان کو اُن کے کئے۔

اﷲ نے وہ گن رکھے ہیں اور وہ بھول گئے۔

 اور اﷲ کے سامنے ہے ہر چیز۔

.6

تو نے نہ دیکھا! کہ اﷲ کو معلوم ہے جو کچھ ہے آسمانوں میں اور زمین میں۔

کہیں نہیں ہوتا مشورہ تین کا جہاں وہ نہیں ان میں چوتھا،

 اور نہ پانچ جہاں وہ نہیں ان میں چھٹا،

اور نہ اُس سے کم نہ زیادہ جہاں وہ نہیں اُن کے ساتھ، جہاں کہیں ہوں۔

پھر جتائے گا ان کو ، جو انہوں نے کیا قیامت کے دن۔

بے شک اﷲ کو معلوم ہے ہر چیز۔

.7

 تو نے نہ دیکھے جن کو منع ہوئی کانا پھوسی؟ پھر وہی کرتے ہیں جو منع ہو چکا ہے،

اور کان میں باتیں کرتے ہیں گناہ کی اور زیادتی کی، اور رسول کی بے حکمی کی۔

 اور جب آئیں تیرے پاس، تجھ کو دعا دیں جو دعا نہیں دی تجھ کو اﷲ نے،

اور کہتے ہیں اپنے دل میں، کیوں نہیں عذاب کرتا ہم کو اﷲ اس پر جو ہم کہتے ہیں؟

بس ہے ان کو دوزخ پیٹھیں (جھلسیں) گے اس میں، سو بُری جگہ پہنچے۔

.8

اے ایمان والو! جب کان میں بات کرو، تو مت کرو بات گناہ کی اور زیادتی کی اور رسول کی بے حکمی کی،

 اور (بلکہ) بات کرو احسان کی اور ادب کی۔

 اور ڈرتے رہو اﷲ سے جس کے پاس جمع (پیش) ہو گے۔

.9

یہ جو ہے کانا پھوسی، سو شیطان کا کام ہے، کہ دلگیر کرے ایمان والوں کو،

اور وہ ان کا کچھ نہ بگاڑے گا بن حکم اﷲ کے۔

اور اﷲ پر چاہیئے بھروسا کریں ایمان والے۔

.10

اے ایمان والو! جب تم کو کہیئے کھل بیٹھو(کشادگی پیدا کرو) مجلسوں میں، تو کھل جاؤ، اﷲ کشادگی دے تم کو۔

اور جب کہیئے اُٹھ کھڑے ہو، تو اٹھ کھڑے ہو،

اﷲ اُونچے کرے اُن کے جو ایمان رکھتے ہیں تم میں اور علم، بڑے درجے۔

اﷲ خبر رکھتا ہے جو کرتے ہو۔

.11

  اے ایمان والو! جب تم کان میں بات کہو رسول سے تو آگے دھر لو اپنی بات کہنے سے پہلے خیرات

یہ بہتر ہے تمہارے حق میں، اور بہت ستھرا۔

 پھر اگر نہ پاؤ تو اﷲ بخشنے والا مہربان ہے۔

.12

 کیا تم ڈر گئے کہ آگے رکھا کرو کان کی بات (سرگوشی) سے پہلے خیراتیں؟

سو جب تم نے نہ کیا (ایسا نہ کر سکو)، اور اﷲ نے معاف (بھی) کیا تم کو،

 تو اب کھڑی رکھو نماز اور دیتے رہو زکوٰۃ، اور حکم پر چلو اﷲ کے اور اس کے رسول کے۔

اور اﷲ کو خبر ہے جو کچھ تم کرتے ہو۔

.13

تو نے نہ دیکھے وہ جو رفیق ہوئے ہیں ایک (ایسے) لوگوں کے ، جن پرغصّے (ناراض) ہوا ہے اﷲ؟

نہ وہ تم میں ہیں نہ اُن میں ہیں،

اور قسمیں کھاتے ہیں جھُوٹ بات پر، اور خبر رکھتے ہیں (جانتے بوجھتے)۔

.14

رکھی ہے اﷲ نے ان کو سخت مار(عذاب)۔

بیشک وہ بُرے کام ہیں جو کرتے رہے ہیں۔

.15

بنایا ہے اپنی قسموں کو ڈھال، پھر روکے ہیں اﷲ کی راہ سے، تو ان کو ذلّت کی مار ہے۔

.16

  کام نہ آئیں گے ان کو ان کے مال اور نہ اُن کی اولاد، اﷲ کے ہاتھ سے کچھ۔

وہ لوگ ہیں دوزخ کے۔ اسی میں رہ پڑے۔

.17

جس دن جمع کریگا اﷲ ا ن کو سارے، پھر قسمیں کھائیں گے ا س کے آگے جیسے کھاتے ہیں تمہارے آگے

اور خیال رکھتے ہیں کہ وہ کچھ بھلی راہ پر رہیں۔

سُنتا ہے وہی ہیں اصل جھوٹے۔

.18

 قابو میں کر لیا ہے ان کو شیطان نے ، پھر بھلائی ان کو اﷲ کی یاد،

وہ لوگ ہیں جتھا شیطان کا۔

 سنتا ہے جو جتھا ہے شیطان کا وہی خراب ہوتے ہیں۔

.19

جو لوگ مخالف ہوتے ہیں اﷲ سے اور اسکے رسول سے، وہ لوگ ہیں سب سے بے قدر لوگوں میں۔

.20

اﷲ لکھ چکا کہ میں زبر (غالب) رہوں گا اور میرے رسول۔

بیشک اﷲ زورآور ہے زبردست۔

.21

تو نہ دیکھے گا کوئی لوگ جو یقین رکھتے ہوں اﷲ پر اور پچھلے دن (آخرت) پر،  پھر دوستی کریں ایسوں سے

جو مخالف ہوئے اﷲ اور اس کے رسول کے،

پڑے وہ اپنے باپ ہوں یا بیٹے ہوں یا اپنے بھائی یا اپنے گھرانے کے۔

ان کے دلوں میں لکھ دیا ہے ایمان، اور ان کی مدد کی ہے اپنے غیب کے فیض سے۔

اور داخل کرے گا ان کو باغوں میں، جن کے نیچے بہتی ہیں نہریں، سدا رہیں ان میں۔

اﷲ ان سے راضی اور وہ اس سے راضی۔

وہ ہیں جتھا اﷲ کا۔

سُنتا ہے! جو جتھا ہے اﷲ کا وہی مراد کو پہنچے۔

*********

.22

Copy Rights:

Zahid Javed Rana, Abid Javed Rana, Lahore, Pakistan

Visits wef 2016

AmazingCounters.com