القرآن الحکیم (اردو ترجمہ)

حضرت شاہ عبدالقادر

سورۃ ابراہیم

Previous           Index           Next

بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيمِ

 

الٓر‌ۚ

 الف۔ لام۔ را۔

ڪِتَـٰبٌ أَنزَلۡنَـٰهُ إِلَيۡكَ لِتُخۡرِجَ ٱلنَّاسَ مِنَ ٱلظُّلُمَـٰتِ إِلَى ٱلنُّورِبِإِذۡنِ رَبِّهِمۡ

ایک کتاب ہے کہ ہم نے اتاری تیری طرف کہ تو نکالے لوگوں کو اندھیروں سے اُجالے کو، اُن کے رب کے حکم سے،

إِلَىٰ صِرَٲطِ ٱلۡعَزِيزِ ٱلۡحَمِيدِ   

راہ پر اس (کے جو)زبردست سرا(قابلِ تعریف)ہے اﷲ کی۔

.1

ٱللَّهِ ٱلَّذِى لَهُ ۥ مَا فِى ٱلسَّمَـٰوَٲتِ وَمَا فِى ٱلۡأَرۡضِ‌ۗ

جس کا ہے سب جو کچھ آسمانوں و زمین میں۔

وَوَيۡلٌ۬ لِّلۡكَـٰفِرِينَ مِنۡ عَذَابٍ۬ شَدِيدٍ   

اور خرابی ہے منکروں کو، ایک سخت عذاب سے۔

.2

ٱلَّذِينَ يَسۡتَحِبُّونَ ٱلۡحَيَوٰةَ ٱلدُّنۡيَا عَلَى ٱلۡأَخِرَةِ وَيَصُدُّونَ عَن سَبِيلِ ٱللَّهِ وَيَبۡغُونَہَا عِوَجًا‌ۚ

جو پسند رکھتے ہیں زندگی دنیا کی آخرت سے،اور روکتے ہیں اﷲ کی راہ سے، اور ڈھونڈتے ہیں اس میں کجی (ٹیڑھا پن)۔

أُوْلَـٰٓٮِٕكَ فِى ضَلَـٰلِۭ بَعِيدٍ۬   

وہ بھول پڑے ہیں دور (گمراہی میں دُور نکل گئے ہیں)۔

.3

وَمَآ أَرۡسَلۡنَا مِن رَّسُولٍ إِلَّا بِلِسَانِ قَوۡمِهِۦ لِيُبَيِّنَ لَهُمۡ‌ۖ

اور کوئی رسول نہیں بھیجا ہم نے، مگر بولی (زبان) بولتا اپنی قوم کی، کہ انکے آگے کھولے(کھول کر سمجھائے)۔

فَيُضِلُّ ٱللَّهُ مَن يَشَآءُ وَيَهۡدِى مَن يَشَآءُ‌ۚ

پھر بھٹکاتا (گمراہ کرتا) ہے اﷲ جس کو چاہے اور راہ (ہدایت) دیتا ہے جس کو چاہے۔

وَهُوَ ٱلۡعَزِيزُ ٱلۡحَكِيمُ   

اور وہ ہے زبردست حکمتوں والا۔

.4

وَلَقَدۡ أَرۡسَلۡنَا مُوسَىٰ بِـَٔايَـٰتِنَآ أَنۡ أَخۡرِجۡ قَوۡمَكَ مِنَ ٱلظُّلُمَـٰتِ إِلَى ٱلنُّورِ

اور بھیجا تھا ہم نے موسیٰ اپنی نشانیاں دے کر کہ نکال اپنی قوم کو اندھیروں سے اُجالے کو۔

وَذَڪِّرۡهُم بِأَيَّٮٰمِ ٱللَّهِ‌ۚ

اور یاد دلا اُن کو دن اﷲ کے۔

إِنَّ فِى ذَٲلِكَ لَأَيَـٰتٍ۬ لِّكُلِّ صَبَّارٍ۬ شَكُورٍ۬   

البتہ اس میں نشانیاں ہیں اس کو جو ثابت (قدم) رہنے والا ہے حق ماننے والا۔

.5

وَإِذۡ قَالَ مُوسَىٰ لِقَوۡمِهِ

 اور جب کہا موسیٰ نے اپنی قوم کو،

ٱذۡڪُرُواْ نِعۡمَةَ ٱللَّهِ عَلَيۡڪُمۡ إِذۡ أَنجَٮٰكُم مِّنۡ ءَالِ فِرۡعَوۡنَ

یاد کرو اﷲ کا احسان اپنے اوپر، جب چھڑایا (نجات دلائی) تم کو فرعون کی قوم سے،

يَسُومُونَكُمۡ سُوٓءَ ٱلۡعَذَابِ وَيُذَبِّحُونَ أَبۡنَآءَكُمۡ وَيَسۡتَحۡيُونَ نِسَآءَڪُمۡ‌ۚ

دیتے تم کو بُری مار، اور ذبح کرتے بیٹے تمہارے اور جیتی رکھتے عورتیں تمہاری۔

وَفِى ذَٲلِڪُم بَلَآءٌ۬ مِّن رَّبِّڪُمۡ عَظِيمٌ۬   

اور اس میں مدد ہوئی تمہارے رب کی بڑی۔

.6

وَإِذۡ تَأَذَّنَ رَبُّكُمۡ لَٮِٕن شَڪَرۡتُمۡ لَأَزِيدَنَّكُمۡ‌ۖ

 اور جب سنا دیا تمہارے رب نے کہ اگر حق مانو گے تو اور دوں گا تم کو،

وَلَٮِٕن ڪَفَرۡتُمۡ إِنَّ عَذَابِى لَشَدِيدٌ۬   

اور اگر نا شکری کرو گے تو میری مار سخت ہے۔

.7

وَقَالَ مُوسَىٰٓ إِن تَكۡفُرُوٓاْ أَنتُمۡ وَمَن فِى ٱلۡأَرۡضِ جَمِيعً۬ا فَإِنَّ ٱللَّهَ لَغَنِىٌّ حَمِيدٌ 

 اور کہا موسیٰ نے اگر منکر ہو گئے تم اور جو لوگ زمین میں ہیں سارے، تو اﷲ بے پرواہ ہے سب خوبیوں سراہا۔

.8

أَلَمۡ يَأۡتِكُمۡ نَبَؤُاْ ٱلَّذِينَ مِن قَبۡلِڪُمۡ قَوۡمِ نُوحٍ۬ وَعَادٍ۬ وَثَمُودَ‌ۛ

 کیا نہیں پہنچی تم کو خبر اُن کی جو پہلے تھے تم سے قوم نوح کی، اور عاد اور ثمود۔

وَٱلَّذِينَ مِنۢ بَعۡدِهِمۡ‌ۛ لَا يَعۡلَمُهُمۡ إِلَّا ٱللَّهُ‌ۚ

اور جو اُن سے پیچھے (پہلے) ہوئے۔ اُن کی خبر نہیں، مگر اﷲ کو۔

جَآءَتۡهُمۡ رُسُلُهُم بِٱلۡبَيِّنَـٰتِ فَرَدُّوٓاْ أَيۡدِيَهُمۡ فِىٓ أَفۡوَٲهِهِمۡ

آئے اُن پاس رسُول اُن کے، نشانیاں لے کر، پھر اُلٹے دیئے اُنکے ہاتھ اُنکے منہ میں،

وَقَالُوٓاْ إِنَّا كَفَرۡنَا بِمَآ أُرۡسِلۡتُم بِهِۦ وَإِنَّا لَفِى شَكٍّ۬ مِّمَّا تَدۡعُونَنَآ إِلَيۡهِ مُرِيبٍ۬   

اور بولے، ہم نہیں مانتے جو تمہارے ہاتھ بھیجا،

اور ہم کو شبہ ہے اس راہ میں جس طرف ہم کو بلاتے ہو جس سے خاطر جمع (مطمئن) نہیں۔

.9

قَالَتۡ رُسُلُهُمۡ أَفِى ٱللَّهِ شَكٌّ۬ فَاطِرِ ٱلسَّمَـٰوَٲتِ وَٱلۡأَرۡضِ‌ۖ

 بولے اُن کے رسول کیا اﷲ میں شبہ ہے جس نے بنائے آسمان اور زمین؟

يَدۡعُوكُمۡ لِيَغۡفِرَ لَڪُم مِّن ذُنُوبِكُمۡ وَيُؤَخِّرَڪُمۡ إِلَىٰٓ أَجَلٍ۬ مُّسَمًّ۬ى‌ۚ

تم کو بلاتا ہے کہ بخشے کچھ گناہ تمہارے اور ڈھیل دے تم کو ایک وعدہ تک جو ٹھہر چکا ہے۔

قَالُوٓاْ إِنۡ أَنتُمۡ إِلَّا بَشَرٌ۬ مِّثۡلُنَا

کہنے لگے، تم تو یہی آدمی ہو ہم سے۔

تُرِيدُونَ أَن تَصُدُّونَا عَمَّا كَانَ يَعۡبُدُ ءَابَآؤُنَا فَأۡتُونَا بِسُلۡطَـٰنٍ۬ مُّبِينٍ۬ 

چاہتے ہو کہ روک دو ہم کو اُن چیزوں سے جن کو پوجتے رہے ہمارے باپ دادے،سو لاؤ (ہمارے پاس) کوئی سند کھلی۔

.10

قَالَتۡ لَهُمۡ رُسُلُهُمۡ إِن نَّحۡنُ إِلَّا بَشَرٌ۬ مِّثۡلُڪُمۡ وَلَـٰكِنَّ ٱللَّهَ يَمُنُّ عَلَىٰ مَن يَشَآءُ مِنۡ عِبَادِهِۦ‌ۖ

 ان کو کہا ان کے رسولوں نے، ہم یہی آدمی ہیں جیسے تم،لیکن اﷲ احسان کرتا ہے، اپنے بندوں میں جس پر چاہے۔

وَمَا كَانَ لَنَآ أَن نَّأۡتِيَكُم بِسُلۡطَـٰنٍ إِلَّا بِإِذۡنِ ٱللَّهِ‌ۚ

اور ہمارا کام نہیں کہ لے آئیں تم پاس سند مگر اﷲ کے حکم سے۔

وَعَلَى ٱللَّهِ فَلۡيَتَوَڪَّلِ ٱلۡمُؤۡمِنُونَ 

اور اﷲ پر بھروسہ چاہیئے ایمان والوں کو۔

.11

وَمَا لَنَآ أَلَّا نَتَوَڪَّلَ عَلَى ٱللَّهِ وَقَدۡ هَدَٮٰنَا سُبُلَنَا

 اور ہم کو کیا ہوا، کہ بھروسا نہ کریں اﷲ پر اور وہ سجھا (بتا) چکا ہم کو ہماری راہیں۔

وَلَنَصۡبِرَنَّ عَلَىٰ مَآ ءَاذَيۡتُمُونَا‌ۚ

اور ہم صبر کریں گے ایذا (تکلیف) پر جو (تم) ہم کو دیتے ہو۔

وَعَلَى ٱللَّهِ فَلۡيَتَوَكَّلِ ٱلۡمُتَوَكِّلُونَ 

اور اﷲ پر بھروسہ چاہیئے بھروسے (کرنے) والوں کو۔

.12

وَقَالَ ٱلَّذِينَ ڪَفَرُواْ لِرُسُلِهِمۡ لَنُخۡرِجَنَّڪُم مِّنۡ أَرۡضِنَآ أَوۡ لَتَعُودُنَّ فِى مِلَّتِنَا‌ۖ

 اور کہا منکروں نے اپنے رسولوں کو ہم نکال دیں گے تم کو اپنی زمین سے یا پھر (لوٹ) آؤ ہمارے دین میں۔

فَأَوۡحَىٰٓ إِلَيۡہِمۡ رَبُّہُمۡ لَنُہۡلِكَنَّ ٱلظَّـٰلِمِينَ   

تب حکم بھیجا اُن کو رب اُن کے نے ہم کھپا (ہلاک کر) دیں گے ان ظالموں کو۔

.13

وَلَنُسۡڪِنَنَّكُمُ ٱلۡأَرۡضَ مِنۢ بَعۡدِهِمۡ‌ۚ

 اور بسا دیں گے تم کو اس زمین میں، اُن کے پیچھے (بعد) ۔

ذَٲلِكَ لِمَنۡ خَافَ مَقَامِى وَخَافَ وَعِيدِ 

یہ ملتا ہے اس کو جو ڈرا کھڑے ہونے سے میرے سامنے اور ڈرا میرے ڈر سے۔

.14

وَٱسۡتَفۡتَحُواْ وَخَابَ ڪُلُّ جَبَّارٍ عَنِيدٍ۬ 

 اور فیصلہ لگے مانگنے اور نا مراد ہوا جو سرکش تھا ضد کرنے والا۔

.15

مِّن وَرَآٮِٕهِۦ جَهَنَّمُ وَيُسۡقَىٰ مِن مَّآءٍ۬ صَدِيدٍ۬   

پیچھے اس کے دوزخ ہے، اور پلائیں گے اس کو پانی پیپ کا۔

.16

يَتَجَرَّعُهُ ۥ وَلَا يَڪَادُ يُسِيغُهُ ۥ وَيَأۡتِيهِ ٱلۡمَوۡتُ مِن ڪُلِّ مَكَانٍ۬ وَمَا هُوَ بِمَيِّتٍ۬‌ۖ

 گھونٹ گھونٹ لیتا ہے اس کو، اور گلے سے نہیں اتار سکتا،اور چلی آتی ہے اس پر موت ہر جگہ سے، اور وہ نہیں مرتا۔

وَمِن وَرَآٮِٕهِۦ عَذَابٌ غَلِيظٌ۬   

اور(ہو گا) اس کے پیچھے مار ہے گاڑھی(سخت عذاب) ۔

.17

مَّثَلُ ٱلَّذِينَ كَفَرُواْ بِرَبِّهِمۡ‌ۖ

 احوال (مثال) اُن کا جو منکر ہوئے اپنے رب سے(یہ ہے کہ) ،

أَعۡمَـٰلُهُمۡ كَرَمَادٍ ٱشۡتَدَّتۡ بِهِ ٱلرِّيحُ فِى يَوۡمٍ عَاصِفٍ۬‌ۖ

اُنکے کئے (اعمال) جیسے راکھ، زور کی چلی اس پر باؤ (ہوا) دن آندھی کے۔

لَّا يَقۡدِرُونَ مِمَّا ڪَسَبُواْ عَلَىٰ شَىۡءٍ۬‌ۚ

کچھ ہاتھ نہیں (آیا) کمائی میں سے۔

ذَٲلِكَ هُوَ ٱلضَّلَـٰلُ ٱلۡبَعِيدُ 

یہی ہے دور بہک پڑنا(گمراہی پرلے درجے کی) ۔

.18

أَلَمۡ تَرَ أَنَّ ٱللَّهَ خَلَقَ ٱلسَّمَـٰوَٲتِ وَٱلۡأَرۡضَ بِٱلۡحَقِّ‌ۚ

 تو نے نہیں دیکھا کہ اﷲ نے بنائے آسمان و زمین، جیسے چاہیئے۔

إِن يَشَأۡ يُذۡهِبۡكُمۡ وَيَأۡتِ بِخَلۡقٍ۬ جَدِيدٍ۬   

اور اگر چاہے تم کو لے جائے اور لائے کوئی پیدائش نئی۔

.19

وَمَا ذَٲلِكَ عَلَى ٱللَّهِ بِعَزِيزٍ۬ 

 اور یہ اﷲ پر مشکل نہیں۔

.20

وَبَرَزُواْ لِلَّهِ جَمِيعً۬ا فَقَالَ ٱلضُّعَفَـٰٓؤُاْ لِلَّذِينَ ٱسۡتَكۡبَرُوٓاْ

اور سامنے کھڑے ہوں گے اﷲ کے سارے، پھر کہیں گے کمزور بڑائی والوں کو،

إِنَّا ڪُنَّا لَكُمۡ تَبَعً۬ا فَهَلۡ أَنتُم مُّغۡنُونَ عَنَّا مِنۡ عَذَابِ ٱللَّهِ مِن شَىۡءٍ۬‌ۚ

ہم تھے تمہارے پیچھے، سو کچھ بچاؤ گے تم ہم سے مار اﷲ کی؟

قَالُواْ لَوۡ هَدَٮٰنَا ٱللَّهُ لَهَدَيۡنَـٰڪُمۡ‌ۖ

وہ بولے، اگر راہ پر لاتا ہم کو اﷲ، البتہ ہم تم کو راہ پر لاتے،

سَوَآءٌ عَلَيۡنَآ أَجَزِعۡنَآ أَمۡ صَبَرۡنَامَا لَنَا مِن مَّحِيصٍ۬ 

اب برابر ہے ہمارے حق میں، ہم بیقراری کریں یا صبر کریں، ہم کو نہیں خلاصی۔

.21

وَقَالَ ٱلشَّيۡطَـٰنُ لَمَّا قُضِىَ ٱلۡأَمۡرُ إِنَّ ٱللَّهَ وَعَدَڪُمۡ وَعۡدَ ٱلۡحَقِّ وَوَعَدتُّكُمۡ فَأَخۡلَفۡتُڪُمۡ‌ۖ

اور بولا شیطان، جب فیصلہ ہو چکا کام، اﷲ نے تم کو دیا تھا سچا وعدہ،اور میں نے وعدہ دیا پھر جھوٹ کیا ،

وَمَا كَانَ لِىَ عَلَيۡكُم مِّن سُلۡطَـٰنٍ إِلَّآ أَن دَعَوۡتُكُمۡ فَٱسۡتَجَبۡتُمۡ لِى‌ۖ

اور میری تم پر حکومت نہ تھی، مگر جو میں نے تم کو بلایا، پھر تم نے مان لیا۔

فَلَا تَلُومُونِى وَلُومُوٓاْ أَنفُسَڪُم‌ۖ

سو مجھ کو مت الزام دو اور الزام دو اپنے تیئں۔

مَّآ أَنَا۟ بِمُصۡرِخِڪُمۡ وَمَآ أَنتُم بِمُصۡرِخِىَّ‌ۖ

نہ میں تمہاری فریاد کو پہنچوں، نہ تم میری فریاد پر پہنچو۔

إِنِّى ڪَفَرۡتُ بِمَآ أَشۡرَڪۡتُمُونِ مِن قَبۡلُ‌ۗ

میں نہیں قبول رکھتا جو تم نے شریک ٹھہرایا تھا پہلے،

إِنَّ ٱلظَّـٰلِمِينَ لَهُمۡ عَذَابٌ أَلِيمٌ۬ 

البتہ جو ظالم ہیں انکو دکھ کی مار ہے۔

.22

وَأُدۡخِلَ ٱلَّذِينَ ءَامَنُواْ وَعَمِلُواْ ٱلصَّـٰلِحَـٰتِ جَنَّـٰتٍ۬ تَجۡرِى مِن تَحۡتِہَا ٱلۡأَنۡہَـٰرُ

 اور داخل کئے جو لوگ ایمان لائے تھے اور کام کئے تھے نیک، باغوں میں ،بہتی نیچے اُنکے ندیاں،

خَـٰلِدِينَ فِيہَا بِإِذۡنِ رَبِّهِمۡ‌ۖ

 رہا کریں ان میں اپنے رب کے حکم سے۔

تَحِيَّتُہُمۡ فِيہَا سَلَـٰمٌ 

اُن کی ملاقات ہے وہاں سلام۔

.23

أَلَمۡ تَرَ كَيۡفَ ضَرَبَ ٱللَّهُ مَثَلاً۬  

 تو نے نہ دیکھا؟ بیان کی اﷲ نے ایک مثال،

كَلِمَةً۬ طَيِّبَةً۬كَشَجَرَةٍ۬ طَيِّبَةٍ أَصۡلُهَا ثَابِتٌ۬ وَفَرۡعُهَا فِى ٱلسَّمَآءِ   

ایک بات ستھری(کلمۂ طیبہ) ، جیسے ایک درخت ستھرا، اسکی جڑ مضبوط ہے، اور ٹہنی آسمان میں۔

.24

تُؤۡتِىٓ أُڪُلَهَا كُلَّ حِينِۭ بِإِذۡنِ رَبِّهَا‌ۗ

 لاتا ہے پھل اپنا ہر وقت پر اپنے رب کے حکم سے۔

وَيَضۡرِبُ ٱللَّهُ ٱلۡأَمۡثَالَ لِلنَّاسِ لَعَلَّهُمۡ يَتَذَڪَّرُونَ 

اور بیان کرتا ہے اﷲ کہاوتیں لوگوں کو، شاید وہ سوچ کریں (سوچیں) ۔

.25

وَمَثَلُ كَلِمَةٍ خَبِيثَةٍ۬  

 اور مثال گندی بات کی،

كَشَجَرَةٍ خَبِيثَةٍ ٱجۡتُثَّتۡ مِن فَوۡقِ ٱلۡأَرۡضِ مَا لَهَا مِن قَرَارٍ۬   

جیسے درخت گندہ،اکھاڑ لیا اوپر سے زمین کے، کچھ نہیں اس کو ٹھہراؤ۔

.26

يُثَبِّتُ ٱللَّهُ ٱلَّذِينَ ءَامَنُواْ بِٱلۡقَوۡلِ ٱلثَّابِتِ فِى ٱلۡحَيَوٰةِ ٱلدُّنۡيَا وَفِى ٱلۡأَخِرَةِ‌ۖ

مضبوط کرتا ہے اﷲ ایمان والوں کو مضبوط بات سے دنیا کی زندگی میں اور آخرت میں۔

وَيُضِلُّ ٱللَّهُ ٱلظَّـٰلِمِينَ‌ۚ

اور بچلا (گمراہ کر) دیتا ہے اﷲ بے انصافوں کو۔

وَيَفۡعَلُ ٱللَّهُ مَا يَشَآءُ   

اور کرتا ہے اﷲ جو چاہے۔

.27

أَلَمۡ تَرَ إِلَى ٱلَّذِينَ بَدَّلُواْ نِعۡمَتَ ٱللَّهِ كُفۡرً۬ا وَأَحَلُّواْ قَوۡمَهُمۡ دَارَ ٱلۡبَوَارِ   

 تو نے نہ دیکھاجنہوں نے بدلہ کیا اﷲ کے احسان کا، نا شکری، اور اتارا اپنی قوم کو تباہی کے گھر میں۔

.28

جَهَنَّمَ يَصۡلَوۡنَهَا‌ۖ وَبِئۡسَ ٱلۡقَرَارُ   

 جو دوزخ ہے پیٹھیں (داخل ہوں) گے اس میں۔ اور برا ٹھکانا ہے۔

.29

وَجَعَلُواْ لِلَّهِ أَندَادً۬ا لِّيُضِلُّواْ عَن سَبِيلِهِۦ‌ۗ

 اور ٹھہرائے اﷲ کے مقابل، کہ بہکائیں لوگوں کو اسکی راہ سے۔

قُلۡ تَمَتَّعُواْ فَإِنَّ مَصِيرَڪُمۡ إِلَى ٱلنَّارِ   

تُو کہہ، برت (عیش کر)لو، پھر تم کو پھر (لوٹ) جانا ہے طرف آگ کے۔

.30

قُل لِّعِبَادِىَ ٱلَّذِينَ ءَامَنُواْ يُقِيمُواْ ٱلصَّلَوٰةَ وَيُنفِقُواْ مِمَّا رَزَقۡنَـٰهُمۡ سِرًّ۬ا وَعَلَانِيَةً۬

 کہہ دے میرے بندوں کو ،جو یقین لائے ہیں، قائم رکھیں نماز، اور خرچ کریں ہماری دی روزی میں سے چھپے اور کھلے ،

مِّن قَبۡلِ أَن يَأۡتِىَ يَوۡمٌ۬ لَّا بَيۡعٌ۬ فِيهِ وَلَا خِلَـٰلٌ 

پہلے اس سے کہ آئے وہ دن جس میں نہ سودا ہے نہ دوستی۔

.31

ٱللَّهُ ٱلَّذِى خَلَقَ ٱلسَّمَـٰوَٲتِ وَٱلۡأَرۡضَ وَأَنزَلَ مِنَ ٱلسَّمَآءِ مَآءً۬

 اﷲ وہ ہے جس نے بنائے آسمان اور زمین ،اور اتارا آسمان سے پانی،  

فَأَخۡرَجَ بِهِۦ مِنَ ٱلثَّمَرَٲتِ رِزۡقً۬ا لَّكُمۡ‌ۖ

پھر اس سے نکالی روزی تمہاری میوے۔

وَسَخَّرَ لَكُمُ ٱلۡفُلۡكَ لِتَجۡرِىَ فِى ٱلۡبَحۡرِ بِأَمۡرِهِۦ‌ۖ

اور کام میں تمہارے دی کشتی کہ چلے دریا میں اسکے حکم سے۔

وَسَخَّرَ لَكُمُ ٱلۡأَنۡهَـٰرَ 

اور کام میں دیں تمہارے ندیاں۔

.32

وَسَخَّرَ لَكُمُ ٱلشَّمۡسَ وَٱلۡقَمَرَ دَآٮِٕبَيۡنِ‌ۖ

 اور کام میں لگائے تمہارے سورج اور چاند، ایک دستور (قانون) پر۔

وَسَخَّرَ لَكُمُ ٱلَّيۡلَ وَٱلنَّہَارَ   

اور کام میں لگائے تمہارے رات اور دن۔

.33

وَءَاتَٮٰكُم مِّن ڪُلِّ مَا سَأَلۡتُمُوهُ‌ۚ

 اور دیا تم کو ہر چیز میں سے جو تم نے مانگی۔

وَإِن تَعُدُّواْ نِعۡمَتَ ٱللَّهِ لَا تُحۡصُوهَآ‌ۗ

اور اگر گنو احسان اﷲ کے، نہ پورے کر (گِن) سکو۔

إِنَّ ٱلۡإِنسَـٰنَ لَظَلُومٌ۬ ڪَفَّارٌ۬   

بیشک آدمی بڑا بے انصاف ہے، نا شکر۔

.34

وَإِذۡ قَالَ إِبۡرَٲهِيمُ رَبِّ ٱجۡعَلۡ هَـٰذَا ٱلۡبَلَدَ ءَامِنً۬اوَٱجۡنُبۡنِى وَبَنِىَّ أَن نَّعۡبُدَ ٱلۡأَصۡنَامَ 

اور جس وقت کہا ابراہیم نے اے رب!

کر اس شہر کو امن کا اور بچا مجھ کو اور میری اولاد کو اس سے کہ ہم پوجیں مورتیں۔

.35

رَبِّ إِنَّہُنَّ أَضۡلَلۡنَ كَثِيرً۬ا مِّنَ ٱلنَّاسِ‌ۖ

 اے رب! انہوں نے بہکایا بہت لوگوں کو۔

فَمَن تَبِعَنِى فَإِنَّهُ ۥ مِنِّى‌ۖ

سو جو کوئی میری راہ چلا، سو وہ تو میرا ہے۔

وَمَنۡ عَصَانِى فَإِنَّكَ غَفُورٌ۬ رَّحِيمٌ۬ 

اور جس نے میرا کہا نہ مانا، سو تو بخشنے والا مہربان ہے۔

.36

رَّبَّنَآ إِنِّىٓ أَسۡكَنتُ مِن ذُرِّيَّتِى بِوَادٍ غَيۡرِ ذِى زَرۡعٍ عِندَ بَيۡتِكَ ٱلۡمُحَرَّمِ

 اے رب! میں نے بسائی ایک اولاد اپنی میدان میں، جہاں کھیتی نہیں، تیرے ادب والے گھر پاس،

رَبَّنَا لِيُقِيمُواْ ٱلصَّلَوٰةَ فَٱجۡعَلۡ أَفۡـِٔدَةً۬ مِّنَ ٱلنَّاسِ تَہۡوِىٓ إِلَيۡہِمۡ

اے رب ہمارے! تا قائم رکھیں نماز سو رکھ بعضے لوگوں کے دل جھکتے ان کی طرف،

وَٱرۡزُقۡهُم مِّنَ ٱلثَّمَرَٲتِ لَعَلَّهُمۡ يَشۡكُرُونَ 

اور روزی دے ان کو میووں سے، شاید یہ شکر کریں۔

.37

رَبَّنَآ إِنَّكَ تَعۡلَمُ مَا نُخۡفِى وَمَا نُعۡلِنُ‌ۗ

 اے رب ہمارے! تُو تو جانتا ہے جو چھپائیں اور جو کھولیں(ظاہر کریں) ۔

وَمَا يَخۡفَىٰ عَلَى ٱللَّهِ مِن شَىۡءٍ۬ فِى ٱلۡأَرۡضِ وَلَا فِى ٱلسَّمَآءِ 

اور چھپا نہیں اﷲ پر کچھ زمین میں اور نہ آسمان میں۔

.38

ٱلۡحَمۡدُ لِلَّهِ ٱلَّذِى وَهَبَ لِى عَلَى ٱلۡكِبَرِ إِسۡمَـٰعِيلَ وَإِسۡحَـٰقَ‌ۚ

شکر ہے اﷲ کو، جس نے بخشا مجھ کو بڑی عمر میں اسمٰعیل اور اسحٰق۔

إِنَّ رَبِّى لَسَمِيعُ ٱلدُّعَآءِ 

بیشک میرا رب سنتا ہے پکار (دُعا) ۔

.39

رَبِّ ٱجۡعَلۡنِى مُقِيمَ ٱلصَّلَوٰةِ وَمِن ذُرِّيَّتِى‌ۚ

 اے رب میرے! کر مجھ کوکہ قائم رکھوں نماز، اور بعضی میری اولاد کو،

رَبَّنَا وَتَقَبَّلۡ دُعَآءِ   

اے رب ہمارے اور قبول کر میری دُعا۔

.40

رَبَّنَا ٱغۡفِرۡ لِى وَلِوَٲلِدَىَّ وَلِلۡمُؤۡمِنِينَ يَوۡمَ يَقُومُ ٱلۡحِسَابُ   

 اے رب ہمارے! بخش مجھ کو اور میرے ماں باپ کو اور سب ایمان والوں کو جس دن کھڑا (قائم) ہوئے حساب۔

.41

وَلَا تَحۡسَبَنَّ ٱللَّهَ غَـٰفِلاً عَمَّا يَعۡمَلُ ٱلظَّـٰلِمُونَ‌ۚ

 اور مت خیال کر کہ اﷲ بے خبر ہے ان کاموں سے جو کرتے ہیں بے انصاف۔

إِنَّمَا يُؤَخِّرُهُمۡ لِيَوۡمٍ۬ تَشۡخَصُ فِيهِ ٱلۡأَبۡصَـٰرُ 

ان کو تو چھوڑ رکھتا ہے اس دن پر، جس دن میں اوپر لگ (پتھرا) جائیں گی آنکھیں۔

.42

مُهۡطِعِينَ مُقۡنِعِى رُءُوسِہِمۡ لَا يَرۡتَدُّ إِلَيۡہِمۡ طَرۡفُهُمۡ‌ۖ

 ڈرتے ہوں گے اوپر اٹھائے اپنے سر، پھرتی نہیں اپنی طرف اُنکی آنکھ۔

وَأَفۡـِٔدَتُہُمۡ هَوَآءٌ۬   

اور دل اُن کے اُڑ گئے ہیں۔

.43

وَأَنذِرِ ٱلنَّاسَ يَوۡمَ يَأۡتِيہِمُ ٱلۡعَذَابُ فَيَقُولُ ٱلَّذِينَ ظَلَمُواْ

 اور ڈرا ئے لوگوں کو اس دن سے کہ آئے گا ان کو عذاب، تب کہیں گے بے انصاف،

رَبَّنَآ أَخِّرۡنَآ إِلَىٰٓ أَجَلٍ۬ قَرِيبٍ۬ نُّجِبۡ دَعۡوَتَكَ وَنَتَّبِعِ ٱلرُّسُلَ‌ۗ

اے رب ہمارے! فرصت دے ہم کو تھوڑی مدت کہ ہم مانیں تیرا بلانا، اور ساتھ ہوں رسولوں کے۔

أَوَلَمۡ تَڪُونُوٓاْ أَقۡسَمۡتُم مِّن قَبۡلُ مَا لَڪُم مِّن زَوَالٍ۬   

تم آگے قسم نہ کھاتے تھے؟ کہ تم کو نہیں کسی طرح ٹلنا(آئے گا زوال) ۔

.44

وَسَكَنتُمۡ فِى مَسَـٰڪِنِ ٱلَّذِينَ ظَلَمُوٓاْ أَنفُسَهُمۡ وَتَبَيَّنَ لَڪُمۡ كَيۡفَ فَعَلۡنَا بِهِمۡ

 اور بسے تھے تم بستیوں میں انہی کی، جنہوں نے ظلم کیا اپنی جان پر،اور کھل (واضح ہو) چکا تم کو ، کہ کیسا کیا ہم نے اُن پر؟

وَضَرَبۡنَا لَكُمُ ٱلۡأَمۡثَالَ   

اور بتائیں ہم نے تم کو کہاوتیں(ہر قسم کی مثالیں) ۔

.45

وَقَدۡ مَكَرُواْ مَڪۡرَهُمۡ وَعِندَ ٱللَّهِ مَڪۡرُهُمۡ

 اور یہ بنا (چل) چکے ہیں اپنا داؤ، اور اﷲ کے آگے (پاس توڑ ) ہے ان کا داؤ(انکے ہر داؤ کا) ۔

وَإِن كَانَ مَڪۡرُهُمۡ لِتَزُولَ مِنۡهُ ٱلۡجِبَالُ   

اور نہ ہو گا ان کا داؤ، کہ ٹل جائیں اس سے پہاڑ۔

.46

فَلَا تَحۡسَبَنَّ ٱللَّهَ مُخۡلِفَ وَعۡدِهِۦ رُسُلَهُ ۥۤ‌ۗ

 سو مت خیال کر کہ اﷲ خلاف کرے گا اپنا وعدہ اپنے رسولوں سے۔

إِنَّ ٱللَّهَ عَزِيزٌ۬ ذُو ٱنتِقَامٍ۬   

بیشک اﷲ زبردست ہے بدلہ لینے والا۔

.47

يَوۡمَ تُبَدَّلُ ٱلۡأَرۡضُ غَيۡرَ ٱلۡأَرۡضِ وَٱلسَّمَـٰوَٲتُ‌ۖ

 جس دن بدلی جائے اس زمین سے اور زمین اور آسمان(بھی بدل دیئے جائیں گے) ،

وَبَرَزُواْ لِلَّهِ ٱلۡوَٲحِدِ ٱلۡقَهَّارِ   

اور لوگ نکل کھڑے ہوں سامنے اﷲ اکیلے زبردست کے۔

.48

وَتَرَى ٱلۡمُجۡرِمِينَ يَوۡمَٮِٕذٍ۬ مُّقَرَّنِينَ فِى ٱلۡأَصۡفَادِ   

 اور دیکھے تو گنہگار اس جوڑے (جکڑے) ہوئے زنجیروں میں۔

.49

سَرَابِيلُهُم مِّن قَطِرَانٍ۬ وَتَغۡشَىٰ وُجُوهَهُمُ ٱلنَّارُ 

 کُرتے ان کے ہیں گندھک کے، اور ڈھانکے لیتی ہے انکے منہ کو آگ۔

.50

لِيَجۡزِىَ ٱللَّهُ كُلَّ نَفۡسٍ۬ مَّا كَسَبَتۡ‌ۚ

 تا (کہ) بدلہ دے اﷲ، ہر جی کو اس کی کمائی کا۔

إِنَّ ٱللَّهَ سَرِيعُ ٱلۡحِسَابِ 

بیشک اﷲ شتاب (جلد) کرنے والا ہے حساب۔

.51

هَـٰذَا بَلَـٰغٌ۬ لِّلنَّاسِ وَلِيُنذَرُواْ بِهِۦ

 یہ خبر کر دینی ہے لوگوں کو اور تا (کہ) چونک (خبردار) رہیں اس سے ،

وَلِيَعۡلَمُوٓاْ أَنَّمَا هُوَ إِلَـٰهٌ۬ وَٲحِدٌ۬ وَلِيَذَّكَّرَ أُوْلُواْ ٱلۡأَلۡبَـٰبِ 

اور تا (کہ) جانیں کہ معبود ہے ایک،اور تا (کہ) سوچ کریں عقل والے۔

*********

.52

Copy Rights:

Zahid Javed Rana, Abid Javed Rana, Lahore, Pakistan

Visits wef 2016

AmazingCounters.com